جندول،بجلی کی لوڈشیڈنگ اور کم وولٹیج سے عوام مشتعل

جندول،بجلی کی لوڈشیڈنگ اور کم وولٹیج سے عوام مشتعل

  

جندول(نمائندہ پاکستان) جندول سب ڈویژن میں کم ولٹیج اور بجلی ناروا لوڈ شیڈنگ کے خلاق احتجاجی مظاہرا،حکومت وقت کے خلاف شدید نعرہ بازی مین شاہرہ کئی گھنٹوں تک بند علاقائی لوگوں نے مقامی نمائندوں سے استعفی دینے کا مطالبہ کردیا مقامی ایم این اے نے مسائل حل کرنے کیلئے ایک بار پھر وعدہ کیا۔تفصلات کے مطابق گزشتہ روز تحصیل منڈا میں بجلی کے ناروا لوڈ شڈنگ اور کم ولٹیج کے پر موجودہ حکومت کے خلاف احتجاجی مظاہرا کیا گیا مین شاہرہ کئی گھنٹوں تک بند ہونے کے علاوہ ایم این اے محمد بشیر خان کے خلاف امنے سامنے شدید نعرہ بازی اور سخت لہجا استعمال قافلے سے گو عمران گو کا نعرے گنج اٹھے۔مظاہرین سے مذاکرات کے بعد تحریک انصاف کے ایم این اے محمد بشیر خان نے چند دن میں مسائل حل کرنے کیلئے وفاقی وزیر عمر ایوب خان سحرہ لینے کا فیصلہ کردیا انہونے کہا کہ جندول، میدان اور دیگر علاقوں کے بجلی لوڈشڈنگ اور کم ولٹیج پر وفاقی وزیر سے بات کرکے مسائل حل کروگا۔مظاہرین سے جماعت اسلامی کے سابقہ تحصیل ناظم ہمایون خان نے تحریک انصاف کے حکومت پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ جندول گریڈ سٹشن اور ثمرباغ بجلی ایکسپر لائن جماعت اسلامی کا منظور کردہ منصوبے ہے تحریک انصاف ایم این یز نے دوسالوں میں تیار منصوبے مکمل نہیں کیں جس سے عوام کو شدید لوڈشڈنگ کا سامنا کرنا پڑتا ہے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -