اسلامیہ کالج پشاور کی سیکورٹی انتظامیہ نے قوانین کی دھجیاں اڑا دیں

اسلامیہ کالج پشاور کی سیکورٹی انتظامیہ نے قوانین کی دھجیاں اڑا دیں

  

پشاور (سٹی رپورٹر)صوبہ کی تاریخی د رسگاہ اسلامیہ کالج پشاور کے سیکورٹی انتظامیہ نے قوانین کی دھجیاں اڑا کر رکھ دی،جامعہ کے اندر صحافیوں کے جانے پر بغیر کسی وجہ کے پابنددی لگا رکھی ہے جبکہ پشاور یونیورسٹی کیمپس کے دیگر جامعات میں ایسا کوئی مسلہ نہیں صرف اسلامیہ کالج پشاور میں ہی صحافیوں کو داخلہ میں رکاوٹوں کا سامنا ہے جبکہ اس ھوالے سے جامعہ کی انتظامیہ اور سیکورٹی انتظامیہ کوئی واضح موقف نہیں دے رہا جبکہ ایک دوسرے پر مالبہ ڈالنے کی کوشش کر رہے ہیں،تفصیلات کے مطابق اسلامیہ کالج میں سیکورٹی عملہ پر تعینات سیکورٹی گارڈز گیٹس پر صحافیوں کو تنگ کرنے لگے جبکہ طلبہ کو بھی اندر جانے کیلئے مسائل کا سامنا ہے قابل ذکر امر یہ ہے کہ جامعہ میں ان دنوں داخلہ کیلئے طلبہ کا انا جانا رہتا ہے تاہم سیکورٹی انتظامیہ کی وجہ سے گیٹس پر تعینات سیکورٹی عملہ کی جانب سے سختی کے باعث طلبہ سمیت صحافیوں کو مشکلات کا سامنا ہے جسکی وجہ سے جامعہ کی ساکھ متاثر ہونے کا خدشہ ہے،جامعہ کی سیکورٹی انتظامیہ نے اس سے قبل بھی صحافیوں کو جامعہ کے اندر جانے کیلئے بلا وجہ تنگ کیا تھا جبکہ گزشتہ روز ایک صوبائی منسٹر کو جامعہ کے سیکورٹی انتظامیہ نے چیکنگ کے نام پر روکے رکا جس پر وہ ناراض ہو کر تقریب میں شریک نہیں ہوئے،جامعہ کی سیکورٹی انتظامیہ کی جانب سے جامعہ میں داخلہ پر بغیر کسی وجہ سے سختی نے صوبہ کے تاریخی درسگاہ کی ساکھ پر ان گنت سوالات کھڑے کر دئے جس پر گورنر خیبر پختونخوا کو نوٹس لینا چاہئے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -