پاکستانی عدالت میں ہمارے شہری کا قتل ”شرمناک سانحہ“، امریکہ

    پاکستانی عدالت میں ہمارے شہری کا قتل ”شرمناک سانحہ“، امریکہ

  

واشنگٹن (اظہر زمان، بیوروچیف) امریکی محکمہ خارجہ نے پاکستان کی ایک عدالت میں ایک امریکی شہری کو گولی مارکر ہلاک کرنے کے وا قعے کو ”شرمناک سانحہ“ قرار دیتے ہوئے پاکستان کی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اس پر فوری کارروائی کرے اور ایسی اصلاحات کرے جس سے مستقبل میں ایسے واقعات کا سدباب ہوسکے۔ طاہر احمد نسیم نامی ایک امریکی شہری جس کا اقلیتی احمدی کمیونٹی سے تعلق تھا،بدھ کو پشا و ر کی ایک عدالت میں پیش ہواتھا۔ اس پر توہین مذہب کا الزام تھا۔ کیونکہ اس نے مبینہ طور پر پیغمبر ہونے کا دعویٰ کیا تھا۔ امریکی محکمہ خارجہ کے جنوبی اور وسط ایشیاء بیورو کی طرف سے جاری ہونیوالے ایک ٹویٹ پیغام میں قتل ہونیوالے امریکی شہری طاہر نسیم کے خاندان سے اظہا ر تعزیت بھی کیا گیا۔ اس کو 2018ء میں گرفتار کیا گیا تھا کیونکہ اس پر الزام لگا تھا کہ وہ پاکستان کے توہین مذہب کے قوانین کی خلاف ورز ی کا مرتکب ہواہے جس کے تحت بعض جرائم کیلئے سزائے موت کی سزاتجویز کی گئی ہے۔ اس ملزم کو گولی مارنیوالا شخص وہ تھا جس نے اس کیخلا ف مقدمہ دائر کیا تھا۔

امریکہ

مزید :

صفحہ اول -