قربانی محض جانور ذبح کرنے یا گوشت کی تقسیم کا نام نہیں بلکہ۔۔۔۔علامہ ساجد میرنےقربانی کا اصل فلسفہ بیان کردیا

قربانی محض جانور ذبح کرنے یا گوشت کی تقسیم کا نام نہیں بلکہ۔۔۔۔علامہ ساجد ...
قربانی محض جانور ذبح کرنے یا گوشت کی تقسیم کا نام نہیں بلکہ۔۔۔۔علامہ ساجد میرنےقربانی کا اصل فلسفہ بیان کردیا

  

 لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے سربراہ سینیٹر پروفیسر ساجد میرنے عید الاضحیٰ کے موقع پر اپنے پیغام میں ملت اسلامیہ اور بالخصوص اسلامیان پاکستان کو عید الاضحیٰ کی مبارک دیتے ہوئے کہا ہے کہ عید الاضحیٰ حضرت ابراہیم ؑ کے عظیم جذبہ ایثار کی یاد میں منائی جاتی ہے،یہی جذبہ ایثار امت محمدیہﷺ کو ممتازاوربلند مقام عطاکرتاہے،قربانی محض جانور ذبح کرنے یا گوشت کی تقسیم کا نام نہیں ہے،قربانی کا فلسفہ یہ ہے کہ اہل ایمان اللہ کے راستے میں جان، مال، اولاد، عزت و آبرو، راحت و آرام قربان کرنے کیلئے ہمہ وقت تیار رہیں۔

سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے کہا کہ قربانی کا مقصد مسلمانوں میں ایثار و قربانی کا جذبہ پیدا کرنا ہے، قربانی کا مقصود تقویٰ اور پرہیز گاری ہے، رضائے الہیٰ کے حصول کی نیت سے کی جانیوالی قربانی کا اللہ کے ہاں بڑا اجر و ثواب ہے۔ علامہ ساجدمیر کا کہنا تھا کہ عید الاضحیٰ کے موقع پرعزیز و اقارب اور مستحقین کا خاص خیال رکھا جائے، یہی عمل اسلامی عبادات کی اصل روح اور اللہ کی خوشنودی کے حصول کا سب سے بڑا ذریعہ ہے،اس موقع پر اتحاد امت، مسلمانوں کو انفرادی اور اجتماعی تکالیف سے نجات ان کی حفاظت، اور دکھوں کے مداوا کی دعائیں مانگنی چاہیے،اسی طرح کشمیر، شام اور فلسطین کے عوام کو بھی اپنی دعاؤں میں یاد رکھنا ہو گا۔انہوں نے کہا کہ اللہ تعالی انہیں مظالم سے نجات دے  اور وہ بھی دیگر آزاد مسلم ریاستوں کی طرح اپنی خوشیاں مناسکیں۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -