پی ٹی آئی رکن اسمبلی نذیر چوہان 14روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل منتقل

پی ٹی آئی رکن اسمبلی نذیر چوہان 14روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل منتقل
پی ٹی آئی رکن اسمبلی نذیر چوہان 14روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل منتقل

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن ) عدالت نےفیڈر ل انویسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے ) کی مزید ریمانڈ کی درخواست مسترد کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی ) کے رکن صوبائی اسمبلی نذیر چوہان کو 14روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔

نجی ٹی وی ہم نیوز کے مطابق ایف آئی اے نے سائبر کرائم ایکٹ کے تحت درج کئے گئے مقدمے میں رکن اسمبلی نذیر چوہان کو جوڈیشل مجسٹریٹ یوسف عبدالرحمان کی عدالت میں پیش کیا اوران کے مزید جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی ۔

سماعت کے دوران نذیر چوہان کے وکلا نے موقف اختیارکیا کہ یہ کیس سیاسی بنیادیوں پر بنایا گیا ہے اور فیس بک پر مشیر احتساب شہزاد اکبر کے خلاف جو پوسٹ شیئر کی گئی تھی وہ رکن اسمبلی کی اپنی نہیں تھی اور نہ ہی ملزم کے پاس ایسی کوئی چیز ہے جس کی ریکوری کرنی ہو،ایف آئی اے والے باہر آکر کہتے ہیں کہ جوڈیشل نہیں ہونے دیں گے ہم مزید ریمانڈ لیں گے جس پرعدالت نے استفسار کیا کہ کیا آپ عدالت پر شک کررہے ہیں ؟ ، جس کے جواب میں وکیل کا کہنا تھا کہ یہ بات نہیں ہے ہمیں آپ پر پورا یقین ہے۔

دوسری جانب ایف آئی اے کے وکیل نے عدالت میں یہ موقف اختیار کیا کہ نذیر چوہان دوران تفتیش تعاون نہیں کررہے ہیں، ان کا فیس بک اکاﺅنٹ چیک کیا ہے جہاں سے کچھ ویڈیو ز ملی ہیں، ملزم کے واٹس ایپ نمبر اور موبائل کی ریکوری کرنی ہے،ان چیزوں کی ریکوری کے ساتھ ہی کیس چلے گا، اس لئے مزید ریمانڈ دیا جائے۔

عدالت نے وکلا کے دلائل مکمل ہونے کے بعد ایف آئی اے کی مزید ریمانڈ کی استدعا مسترد کرتے ہوئے نذیر چوہان کو14روز کے لئے جوڈیشل ریمانڈ پر بھیج دیا۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -علاقائی -پنجاب -لاہور -