وہ موبائل ایپلی کیشنز جن کیخلاف گوگل نے کمر کس لی، ڈیلیٹ کرنا شروع

وہ موبائل ایپلی کیشنز جن کیخلاف گوگل نے کمر کس لی، ڈیلیٹ کرنا شروع
وہ موبائل ایپلی کیشنز جن کیخلاف گوگل نے کمر کس لی، ڈیلیٹ کرنا شروع

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) گوگل نے ’شوگر ڈیڈی ڈیٹنگ ایپلی کیشنز‘ کے خلاف احسن قدم اٹھا لیا۔ ڈیلی سٹار کے مطابق یہ ایسی ایپلی کیشنز تھیں جن کے ذریعے عمر رسیدہ امیر آدمی نوعمر لڑکیوں، بالخصوص طالبات کو اپنے چنگل میں پھانستے اور ان کے اخراجات پورے کرنے ان کا جنسی استحصال کرتے تھے۔ اب یہ ایپلی کیشنز گوگل کے ایپ سٹور سے ہٹائی جا رہی ہیں۔ گوگل نے اس فیصلے سے قبل مختلف ممالک کی حکومتوں اور ایڈووکیسی گروپوں کے ساتھ طویل گفتگو کی، جس کے بعد ان ایپلی کیشنز کے خلاف اقدام کا اعلان کیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق گوگل نے ان ایپلی کیشنز کے خلاف اقدام کے علاوہ بھی اپنی جنسیت سے متعلق پالیسی میں کڑی تبدیلیاں کی ہیں جن کا اطلاق یکم ستمبر سے ہونے جا رہا ہے۔ ان تبدیلیوں کے تحت ایسی کوئی بھی ایپلی کیشن اب پلے سٹور میں جگہ نہیں پا سکے گی جو پیسوں کے عوض جنسی تعلق سے متعلق ہو گی۔ گوگل کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ”ہم نے این جی اوز اور حکومتوں کے فیڈبیک کو مدنظر رکھتے ہوئے اپنی نامناسب مواد کی پالیسی میں تبدیلی کی ہے۔ اس تبدیلی کے بعد گوگل پلے سٹور پر رقم کے عوض جنسی تعلق سے متعلق کوئی بھی ایپلی کیشن موجود نہیں رہے گی۔“

مزید :

سائنس اور ٹیکنالوجی -