وہ 6طرح کا پیٹ درد جسے کسی صورت نظرانداز نہیں کرنا چاہیے 

وہ 6طرح کا پیٹ درد جسے کسی صورت نظرانداز نہیں کرنا چاہیے 
وہ 6طرح کا پیٹ درد جسے کسی صورت نظرانداز نہیں کرنا چاہیے 
سورس: Pxhere (creative commons license)

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) پیٹ درد کو عموماً لوگ نظر انداز کرتے ہیں اور گھر پر ہی اس کا علاج کرنے کی کوشش کرتے ہیں مگر اب ایک ماہر ڈاکٹر نے اس حوالے سے متنبہ کر دیا ہے۔ 

دی سن کے مطابق برطانیہ کی ڈاکٹر سارا جرویس نے کہا ہے کہ 6طرح کا پیٹ درد ایسا ہوتا ہے کہ اسے کسی صورت نظرانداز نہیں کرنا چاہیے کیونکہ یہ کسی خطرناک بیماری کی علامت بھی ہو سکتا ہے اور یہ بیماری کینسر بھی ہو سکتی ہے۔ اگر کسی شخص کو پیٹ میں درد رہتا ہے اوراس کے ساتھ اس کے پاخانے کے ساتھ خون بھی آتا ہے تو غالب امکان ہے کہ وہ شخص مقعد کے کینسر میں مبتلا ہے۔

ڈاکٹر سارا کا کہنا تھا کہ اسی طرح اگر کسی شخص کو بہت تیز پیٹ درد اٹھتا ہے تو یہ اپینڈکس یا معدے کے السر کی علامت ہو سکتا ہے۔ اس کے علاوہ یہ گردے میں پتھری کی وجہ سے بھی ہو سکتا ہے۔ اگر کوئی شخص پیٹ درد کے ساتھ خود کو بیمار بھی محسوس کر رہا ہے تواس کے معدے میں سنجیدہ نوعیت کا کوئی مسئلہ ہے۔ اس کا پتہ ٹھیک سے کام نہیں کر رہا، اسے قبض یا ڈائریا لاحق ہے یا اس کا نظام انہضام ٹھیک کام نہیں کر رہا۔ ڈاکٹر سارا نے بتایا کہ اگر کسی شخص کو مسلسل پیٹ درد لاحق ہے اوراس کا وزن بھی کم ہو رہا ہے تو غالب امکان ہے کہ وہ کینسر کا شکار ہے۔ اسی طرح پیٹ درد کے ساتھ بخار ہو تو یہ انفلیمیشن، فوڈ پوائزننگ، پتے میں انفیکشن، پیڑو کے پٹھوں کی انفیکشن وغیرہ کی علامت ہو سکتا ہے اور اگر آپ کو دائمی نوعیت کا پیٹ درد لاحق ہے تو یہ اس بات کی علامت ہے کہ آپ کا معدہ ٹھیک سے خوراک ہضم نہیں کر رہا۔ آپ کو ذہنی دباﺅ لاحق ہے، آپ بہت زیادہ کیفین لے رہے ہیں یا رات کو بہت دیر سے کھانا کھا رہے ہیں۔

مزید :

تعلیم و صحت -