دعوے دھرے رہ گئے ضلعی حکومت تجاوزات کا مکمل خاتمہ کرنے میں ناکام

دعوے دھرے رہ گئے ضلعی حکومت تجاوزات کا مکمل خاتمہ کرنے میں ناکام ...

                                                                               لاہور (ج الف، جنرل رپورٹر) ضلعی حکومت تمام تر کوششوں کے باوجود شہر لاہور سے تجاوزات کا مکمل صفایا کر سکی ہے نہ سرکاری زمینوں پر قبضے واگزار کرا سکی ہے اور شہر کی صورت حال دیکھ کر کہا جا سکتا ہے کہ ضلعی حکومت ٹاﺅنوں کی طرف سے شہر لاہور کو تجاوزات کی منڈی میں تبدیل کرنے والے ٹاﺅن مافیا کے سامنے ہار گئی ہے اور تجاوزات کے نام پر دیہاڑیاں لگانے والا مافیا جیت گیا ہے جس کا واضح ثبوت یہ ہے کہ شہر لاہور کے گلی کوچے بازار چوک ، مارکیٹوں اور سڑکوں پر بنائے گئے سب وے تجاوزات سے بھر گئے ہیں۔ سروسز ہسپتال کے ایمرجنسی کے سامنے واقع انڈر پاس سب وے مکمل طور پر تجاوزات کی منڈی میں تبدیل ہو چکا ہے، لوہاری انڈر پاس سب وے میں پیدل چلنا مشکل ہے، فیروزپور رڈ اچھرہ سب وے پر بھی قبضے ہیں۔ عزیز بھٹی ٹاﺅن میں لال پل کے قریب کماہار پورہ پھاٹک تک سرکاری زمینوں پر مسلسل قبضے قائم ہیں۔ راوی ٹاﺅن پورا تجاوزات کی منڈی میں تبدیل ہو چکا ہے۔اندرون شہر، بادامی باغ مارکیٹ سمت تمام دروازوں کے گردونواح میں قبضے قائم دائم ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ ضلعی حکومت کی طرف سے9ٹاﺅنوں کی مشترکہ ٹیمیں تشکیل دے کر شہر لاہور کو تجاوزات سے مکمل پاک کرنے کے لئے آپریشن شروع کیا گیا۔ شہر کو تین حصوں میں تقسیم کیا گیا جس کے لئے تین تین ٹاﺅنوں پرمشتمل سکواڈ تشکیل دے دیئے گئے جس کے سربراہ تین تحصیلوں کے اسسٹنٹ کمشنرز کو بنایا گیا۔ شہر کے موصولہ شکایات اور سروے کے مطابق آپریشن کے دوران ہٹائی گئی تجاوزات دوبارہ قائم ہو گئی ہیں۔ تجاوزات قائم کرانے والوں کو ٹاﺅنوں کی انظامیہ کی مکمل حمایت حاصل ہے۔ لاہور کی200 مارکیٹوں میں دوبارہ تجاوزات قائم ہو گئی ہیں۔ راوی ٹاﺅن کی حدود میں واقع اندرون شہر کی مارکیٹں مکمل طور پر تجاوزات کی آماج گاہ بن گئی ہیں۔ اسی طرح داتا گنج بخش ٹاﺅن کی حدود میں ٹی ایم او کی خاموشی سے70 فیصد علاقوں میں دوبارہ تجاوزات کا بول بالا ہو گیا ہے۔ ہال روڈ، میکلوڈ روڈ، میو ہسپتال روڈ، اردو بازار چوک، ساندہ، عابد مارکیٹ، بلال گنج، داتا دربار، مال روڈ پر دوبارہ تجاوزات قائم ہو گئی ہیں۔ اقبال ٹاﺅن، واہگہ ٹاﺅن، گلبرگ ٹاﺅن میں ہٹائی گئی تجاوزات دوبارہ قائم ہو گئی ہیں۔ شالا مار ٹاﺅن کی حدود میں تجاوزات ایڈمنسٹریٹر کی سفارشوں سے دوبارہ لگ گئی، جی ٹی روڈ، حق نواز روڈ، چاہ میراں بازار، گھوڑے شاہ پر ایڈمنسٹریٹر کی سفارشوں سے دوبارہ تجاوزات قائم ہو گئی ہیں ان علاقوں تجاوزاتیوں کا سامان اے سی شالا مار نے دوبارہ واپس کرا دیا جس سے جہاں تجاوزات ہی تجاوزات نظر آتی ہیں۔ اس حوالے سے ڈی سی او لاہور ڈاکٹر احمد جاوید فاضی سے بات کی گئی تو انہوں نے کہا کہ تجاوزات کے خلاف گرینڈ آپریشن جاری ہے یہ نہیں کہا جا سکتا کہ آپریشن ناکام ہو گیا ایسا نہیں ہے ابھی آپریشن جاری ہے۔ لاہور کو تجاوزات سے پاک کر کے دم لیں گے جو ملازمین دوبارہ تجاوزات قائم کرانے میں ملوث پائے گئے ان کے خلاف کارروائی کریں گے۔ انہوں نے ہا کہ پہلی مرتبہ کروڑوں روپے کی زمین وازگزار کرائی گئی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...