سچا پیار کرنے والوں کے لئے انتہائی خوفناک خبر ,سب سے اہم چیز ہی ساتھ چھوڑ جاتی ہے

سچا پیار کرنے والوں کے لئے انتہائی خوفناک خبر ,سب سے اہم چیز ہی ساتھ چھوڑ ...

اوٹاوا(مانیٹرنگ ڈیسک) خوشگوار ازدواجی تعلقات کے موضوع پر اب تک درجنوں تحقیقات ہو چکی ہیں اور ماہرین اس کے حصول کے کئی گُر بتا چکے ہیں۔ اب ایک تحقیق میں کینیڈین سائنسدانوں نے میاں بیوی کے خوشگوار ازدواجی تعلق میں ایک ایسی چیز کو رکاوٹ قرار دے دیا ہے کہ آپ سن کر حیران رہ جائیں گے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں نے بتایا ہے کہ ”جو لوگ ’سچے پیار‘ پر یقین رکھتے ہیں اور انہیں اپنے شریک حیات کی محبت پر پورا اعتماد ہوتا ہے وہ جسمانی صحت کے حوالے سے کمزور واقع ہوتے ہیں۔“

یونیورسٹی آف ٹورنٹو کے سائنسدانوں نے اس کی وجہ یہ بتائی ہے کہ جن لوگوں کو اپنے شریک حیات کی ’سچی محبت‘ پر اعتماد ہوتا ہے وہ اپنی جنسی صحت کے حوالے سے لاپروا ہو جاتے ہیں اور اس پر مناسبت توجہ نہیں دیتے، جس سے ان کی ازدواجی کارکردگی شدید متاثر ہوتی ہے۔ ایسے جوڑے جنسی اعتبار سے ایک دوسرے کے لیے ناموزوں ہوتے ہیں اور یہ اپنی ناموزونیت پر کام کرنے اور اسے سدھارنے میں لاپروائی برت کر اپنے تعلق ہی کا خاتمہ کر بیٹھتے ہیں۔

’یہ شرمناک ترین کام کرنے سے مَردوں کی عمر میں اضافہ ہوجاتا ہے‘ جدید تحقیق میں سائنسدانوں نے ایسا اعلان کردیا کہ سن کر دنیا بھر کے مَردو خواتین کے چہرے لال ہوجائیں

تحقیقاتی ٹیم کی رکن جیسیکا میکس ویل کا کہنا تھا کہ ”1900جوڑوں پر کی گئی اس تحقیق میں ثابت ہوا ہے کہ جو لوگ اپنے شریک حیات کی محبت پر اعتماد رکھتے ہیں اور اسے ازدواجی زندگی سے جوڑ لیتے ہیں وہ اپنی جنسی صحت پر توجہ نہیں دیتے۔ اس کے برعکس جو لوگ جنسی گروتھ پر یقین رکھتے ہیں انہیں نہ صرف یہ یقین ہوتا ہے کہ وہ اپنے جنسی مسائل پر قابو پا سکتے ہیں بلکہ وہ اپنے ازدواجی تعلق کو بھی اس سے متاثر نہیں ہونے دیتے۔ چنانچہ ان کی ازدواجی زندگی خوشگوار گزرتی ہے۔ شادی شدہ جوڑوں کو اپنی ازدواجی زندگی خوشگوار بنانے کے لیے سچے پیار پر انحصار کرنے کی بجائے جنسی صحت اور اپنے شریک حیات کے ساتھ جسمانی اعتبار سے موزونیت پر توجہ دینی چاہیے۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس