یمنی بحران کا حل خلیجی اقدام اورعالمی مذاکرات کے نتیجے پر ہونا چاہیے،سعودی عرب

یمنی بحران کا حل خلیجی اقدام اورعالمی مذاکرات کے نتیجے پر ہونا چاہیے،سعودی ...

عمان(این این آئی)سعودی عرب نے کہاہے کہ یمن کا اتحاد اور استحکام بڑی اہمیت کا حامل ہے یمنی بحران کا حل خلیجی اقدام اور بین الاقوامی مذاکرات کے نتیجے پر مبنی ہونا چاہیے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ایک انٹرویومیں شاہ سلمان نے کہاکہ شامی عوام قتل ہورہے ہیں۔اس لیے اس بحران کا فوری طور پر کوئی حل تلاش کیا جانا چاہیے۔لیبیا میں جاری خانہ جنگی کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے خادم الحرمین الشریفین نے تمام متحارب فریقوں پر اس ملک کی قومی وحدت اور علاقائی خود مختاری برقرار رکھنے کی ضرورت پر زوردیا اور کہا کہ وہ اپنے ملک میں سلامتی اور استحکام کے لیے کردار ادا کریں۔انھوں نے واضح کیا کہ اس وقت عرب اقوام کو سب سے زیادہ خطرہ دہشت گردی اور انتہا پسندی سے درپیش ہے۔انھوں نے عرب دنیا کے درمیان اقتصادی تعاون کو فروغ دینے کے لیے مشترکہ اقتصادی میکانزم کو فعال بنانے پر بھی زور دیا۔

مزید : عالمی منظر