ڈھاکہ ،بین الپارلیمانی یونین اسمبلی اجلاس کل ، پاکستان کا شر کت نہ کرنے کا فیصلہ

ڈھاکہ ،بین الپارلیمانی یونین اسمبلی اجلاس کل ، پاکستان کا شر کت نہ کرنے کا ...

اسلام آباد (این این آئی) پاکستان کی پارلیمان نے بنگلہ دیش حکومت کی جانب سے پاکستان کیخلاف بے بنیاد اور منفی پروپیگنڈے اور پاکستان کے عوام و ریاست کیساتھ غیر دوستانہ و متعصبانہ رویے کی بنا پر انتہائی دکھ اور افسوس کیساتھ ڈھاکہ میں کل سے شروع ہونیوالی بین الپارلیمانی یونین اسمبلی کے 136ویں اجلاس میں شر کت نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔کانفرنس میں سپیکرقومی اسمبلی سر دار ایاز صادق کی سر براہی میں دس رکنی پارلیمانی وفد نے شرکت کرنا تھی۔اس ضمن میں سپیکر قومی اسمبلی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے پا کستا ن کی پارلیمان کے مشاہدے میںیہ بات آئی ہے کہ پاکستان کی طرف سے مسلسل تحمل و برداشت و خیر سگالی کی کوششوں کے باوجود بنگلہ دیش کی قیادت، حکومتی اہلکار اور میڈیا پاکستان کیخلاف منفی بیانات و بے بنیاد الزامات کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہیں ،ان حالات میں بنگلہ دیش کا دورہ کرنا بے سود ہے۔بنگلہ دیش کے سپیکر کو متعدد بار دورہ پاکستان کی دعوت دی گئی لیکن انہوں نے دورہ نہ کیا ۔ گزشتہ دو سال میں بنگلہ دیش کے سپیکر کیساتھ ذاتی و اعلی سطحی رابطوں کے باوجود بنگلہ دیش کے پارلیمانی وفود نے پاکستان میں16ء میں منعقد ہ سارک ینگ پارلیمانی کانفرنس ، ویمن پارلیمنٹری کانفرنسز اور17ء میں منعقد ہ ایشیائی پارلیمانی اسمبلی کے اجلاس میں شر کت نہیں کی ۔سپیکر نے کہا ان تمام تر مخلصانہ کوششوں کے باوجود بنگلہ دیش کاپاکستان کو بار بار نشانہ بنانا ، انتہائی مخا لفانہ اورمتعصبانہ رویہ روا رکھنا انتہائی دکھ کی بات ہے جس کی بناپربین پارلیمانی یونین کے اجلا س میں شر کت نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے ،تاہم سپیکر نے اپنے بیان میں بنگلہ دیشی پارلیمنٹ و عوام کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا ۔

پاکستان فیصلہ

مزید : صفحہ اول