ایف آئی اے نے سپریم کورٹ میں خلاف ضابطہ تقریوں کا اعتراف کر لیا

ایف آئی اے نے سپریم کورٹ میں خلاف ضابطہ تقریوں کا اعتراف کر لیا

اسلام آباد (آن لائن )ایف آئی اے نے سپریم کورٹ میں خلاف ضابطہ تقریوں کا اعتراف کر لیا جبکہ عدالت عظمیٰ نے سات افسران سے تحریری جواب طلب کرتے ہوئے نوٹسز جاری کردیئے ہیں ، کیس کی سماعت جمعرات کو جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے کی ، دوران سماعت ایف آئی اے نے خلاف ضابطہ تقرریوں سے متعلق جواب جمع کرایا جس میں عدالت کو بتایا گیا ہے کہ افسران کی تقریاں خلاف ضابطہ ہوئیں،ان تقریوں کو کالعدم قرار دیا جائے جبکہ درخواست گزار افسران کے وکیل نے درخواست گزار کو عادی پیٹشنر قرار دیتے ہوئے کہا عدالتوں میں درخواستیں دینا درخواست گزار کا کاروبار ہے،عدالت محتاط رویہ اختیار کرے، اس پر جسٹس گلزار احمد نے کہا کیا ایسی صورتحال میں عدالتوں کو بند کردیں،سپریم کورٹ نے کیا کرنا ہے یہ ہمیں نہ بتایا جائے ، عدالت نے خلاف ضابطہ تقرر ہونیوالے سات افسران کو نوٹس جاری کرتے ہوئے ان سے تحریری جواب طلب کرتے ہوئے مقدمہ کی سماعت غیر معینہ مدت کیلئے ملتوی کردی ۔

ایف آئی اے اعتراف

مزید : کراچی صفحہ اول