شیر گڑھ، جلالہ غنو شاہ طالب علم کے اندھے قتل کا ڈراپ سین

شیر گڑھ، جلالہ غنو شاہ طالب علم کے اندھے قتل کا ڈراپ سین

شیرگڑھ (نامہ نگار) جلالہ غنو شاہ طالب علم کے اندھے قتل کا ڈراپ سین پرائیویٹ سکول کا ٹیچر قاتل نکلا بد فعلی سے انکار پر طالب علم کو قتل کیا پندرہ سالہ نوجوان مقتول محمد عیسیٰ نماز عشاء کے لئے گھر سے نکلا دیر کرنے پر والدین نے تلاش کیا تو ان کا قریبی کھیتوں سے قتل شدہ لاش ملی ملزم شاگرد سے بدفعلی کرنا چاہ رہاتھا شاگرد نے موت کو گلے لگالیا مگر اپنی عزت پر آنچ نہیں آنے دیا ملزم نے نماز جنازہ اوردعا میں بھی شرکت کی تفصیلات کے مطابق پولیس تھانہ شیرگڑھ کے ایس ایچ او ولایت شاہ خان اور تفتیشی انچارج تاج محمد خان نے پولیس تھانہ شیرگڑھ میں مقتول کے والد خان بہادر اور یونین کونسل جلالہ کے منتخب نمائندوں فرخ سیئر ایڈوکیٹ اور حاجی میرعالم کے ساتھ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ10مارچ کو جلالہ غنو شاہ کے 15سالہ طالب علم محمد عیسیٰ ولد خان بہادر اسلام آباد سے امتھان کی تیاری کے لئے گاؤں آیارات کے وقت نماز عشاء کے لئے گھر سے نکلاجب کافی دیر بعد گھر واپس نہیں آیا تو والدین نے پریشان ہوکر ان کو تلاش کیا کچھ دیر بعد محمد عیسیٰ کا قتل شدہ لاش قریبی کھیتوں سے ملاتوان کے والد خان بہادر نے شیرگڑھ پولیس تھانہ میں نامعلوم ملزمان کے خلاف قتل کی دعویداری کی جس پر ڈی پی او مردان ڈاکٹر میاں سعید احمد نے اے ایس پی سرکل تخت بھائی علی بن طارق کی قیادت میں ایس ایچ او شیرگڑھ ولایت شاہ خان اور انچارج انوسٹی گیشن تاج محمد خان پر مشتمل ٹیم بناکر سائنسی بنیادوں پر تفتیش کرانے کی ہدایات جاری کی جس پر تفتیش کا آغاز کیاکمپیوٹر لیب سے سم نمبر ٹریس کیا تو معلوم ہوا کہ مقتول محمد عیسیٰ کو ملزم سلیم خان ولد فضل کریم سکنہ سلطان کلے پرخونے 2145بار فون کیا اس دوران ہم نے ملزم سلیم خان کے بارے میں معلوم کیا تو پتہ چلا کہ وہ مقتول کاکلاس پنجم میں پرائیویٹ سکول میں استاد رہ چکاہے اور انتہائی غریب ہونے کی وجہ سے محمد عیسیٰ اپنے استطاعت کے مطابق اکثر ان کی مدد بھی کرتے تھے اس دوران ملزم سلیم خان کا ان پر بری نظر پڑی اور وہ ان کے ساتھ بدفعلی کرنا چاہ رہاتھا جس پر مقتول نے انکارکیاتو ملزم نے ان پر فائرنگ کی جس سے وہ موقع پر جاں بحق ہوگیا ملزم سلیم خان نے ان کی نماز جنازہ اور دعا میں بھی شرکت کی تاکہ کسی کو ان پر شک نہ گزرے لیکن جب ہم نے ان کو گرفتار کیا اور ان سے تفتیش شروع کی تو انہوں نے تمام تفصیلات پولیس کو بتائی اور اپنے جرم کا اعتراف کرکے آلہ قتل بھی ان سے برآمد کیا

مزید : پشاورصفحہ آخر