گجرات :پولیس تشدد سے ملزم کی ہلاکت ،ورثاء کا ہسپتال میں احتجاج

گجرات :پولیس تشدد سے ملزم کی ہلاکت ،ورثاء کا ہسپتال میں احتجاج

گجرات (بیورورپورٹ)کالرہ پنواں کے رہائشی پرویز کی مبینہ پولیس تشدد سے ہلاکت کیخلاف ورثا نے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر عزیز بھٹی شہید ہسپتال میں احتجاجی مظاہرہ کیا متوفی کی بیٹی کرن اور دیگر اہلخانہ نے الزام عائد کیا کہ پرویز کو ایک ماہ تک تھانہ بی ڈویژن اور ٹانڈہ کے علاوہ مختلف تھانوں میں حراست میں رکھ کر تشد دکا نشانہ بنایا گیا جسم پر زخموں کے واضح نشانات موجود ہیں نیم مردہ حالت میں اسے جیل منتقل کیا گیا جہاں وہ دم توڑ گیا، ادھر پی آر او ٹو ڈی پی او گجرات کا کہنا ہے ملزم کو تندرست حالت میں جیل حکام کے حوالے کیا گیا جبکہ صدر گجرات بار ایسوسی ایشن چوہدری صابر علی چیمہ ایڈووکیٹ نے متاثرہ خاندان کوقانونی امداد فراہم کرنے کا اعلان کر دیا دوسری جانب مقامی مجسٹریٹ بھی واقعہ کے بعد عزیز بھٹی شہید ہسپتال پہنچے اور ورثاء کے بیانات قلمبند کر لئے ۔واضح رہے کروڑوں کی بولی والی کمیٹی کے فلاپ ہونے پر فرار باپ اعجاز اور اسکے بیٹے کو تھانہ بی ڈویژن پولیس نے کچھ عرصہ قبل گرفتار کر کے جیل بجھوا دیا تھا جبکہ انکا ایک بھائی پرویز بھاگوال تھانہ میں گرفتار کیا گیا جو مبینہ پولیس تشدد سے جانبر نہ ہو سکا اور ہلاک ہو گیا ، جس کی ہلاکت کی خبر جنگل کی آگ کی طرح پھیل گئی۔

گجرات ورثاء احتجاج

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر