کراچی ، نومولود بچہ کیس کے 7 ملزمان کو جیل روانہ کردیاگیا

کراچی ، نومولود بچہ کیس کے 7 ملزمان کو جیل روانہ کردیاگیا

کراچی(اسٹاف رپورٹر)جوڈیشل مجسٹریٹ غربی نے قطر اسپتال سے اغوا ہونے والے نومولود بچہ کیس کے 7 ملزمان کو جیل روانہ کردیا جبکہ دوسری جانب جوڈیشل مجسٹریٹ وسطی نے ناظم آباد منی بس فائرنگ کیس کے گرفتار ملزم کے جسمانی ریمانڈ میں مزید ایک روز کی توسیع کردی۔جمعرات کوجوڈیشل مجسٹریٹ غربی کے روبرو پولیس نے جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے پر قطر اسپتال سے چند روز قبل اغوا ہونے والے نومولود بچہ کیس میں گرفتار 7 ملزمان کو پیش کیا۔عدالت کے روبرو پیش کئے ملزمان میں جمعہ خان، مسیح اللہ، روزی خان، محمد انور، سرور، محمد عمر اور خان محمد شامل تھے۔عدالت نے ساتوں ملزمان کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل روانہ کرتے ہوئے تفتیشی افسر کو مقدمہ کا چالان جمع کرانے کا حکم دیا۔واضح رہے کہ مقدمہ میں نامزد مرکزی ملزمہ مسرت سمیت 4 خواتین پہلے ہی سے جوڈیشل ریمانڈ پر جیل میں ہیں۔تمام ملزمان کو پولیس نے ملزمہ مسرت کی نشاندہی پر سہراب گوٹھ کے علاقے افغان بستی سے گرفتار کیا تھا۔ادھر جوڈیشل مجسٹریٹ وسطی کی عدالت میں پولیس نے ناظم آباد میں منی بس پر فائرنگ کرنے کرنے میں ملوث ملزم پولیس اہلکار نصیر کو جسمانی ریمانڈ میں توسیع کے لئے پیش کیا۔تفتیشی افسر نے عدالت کو آگاہ کیا کہ ملزم سے مزید تفتیش کرنی ہے اور گواہوں کے بیانات بھی ریکارڈ کرانا ہے ۔عدالت سے استدعا ہے کہ ملزم کے جسمانی ریمانڈ پر توسیع کی جائے۔عدالت نے پولیس کی استدعا کو منظور کرتے ہوئے ملزم پولیس اہلکار نصیر کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع کرتے ہوئے کارروائی ملتوی کردی۔یاد رہے کہ چند روز قبل ناظم آباد میں بس پر فائرنگ ہوئی تھی جس میں 3 افراد زخمی ہوئے تھے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر