بجلی بحران سنگین ،زندگی اجیرن ہو گئی ،کاشتکاروں کو پانی کی شدید قلت کا سامنا

بجلی بحران سنگین ،زندگی اجیرن ہو گئی ،کاشتکاروں کو پانی کی شدید قلت کا سامنا

ملتان ‘ میلسی ‘ ماچھیوال ‘ اڈا کوٹ بہادر ‘ بٹہ کوٹ ‘ دو کوٹہ ‘ چشتیاں ( سٹاف رپورٹر ‘ نمائندگان ) ملتان سمیت جنوبی پنجاب میں بجلی کا بحران بدترین ہوگیا ‘ کاروبار زندگی مفلوج ‘ کاشتکاروں کو پانی کی قلت کا شدید سامنا ‘ شہری بھی بلبلا اٹھے ۔ ملتان سے سٹاف رپورٹر کے مطابق میپکو ریجن میں بجلی کابحران سنگین ہو گیا ہے ‘موسم گرما شروع ہوتے ہی لوڈشیڈنگ کے دورانیہ میں اضافہ ہو گیا ہے ‘ شہروں میں 3گھنٹے اور دیہات میں 4گھنٹے لوڈشیڈنگ کے دعوے اور اعلانات الٹ ہو گئے ہیں‘ جنوبی پنجاب کے دیہی علاقوں میں دوارانیہ 10 گھنٹے سے 12گھنٹے تک پہنچ گیا ہے‘ بعض علاقوں میں 18گھنٹے تک لوڈشیڈنگ کی (بقیہ نمبر36صفحہ7پر )

جا رہی ہے ‘ شہروں میں نئے فیڈرز کی تنصیب ‘ بحالی و مرمت کے کاموں کے سلسلے میں بجلی کی اضافی بندش سے بھی شہری اور تاجر اذیت میں مبتلا ہو گئے ہیں۔ اڈا کوٹ بہادر سے نمائندہ پاکستان کے مطابق گزشتہ دس روز سے نہروں میں پانی کی بندش کا سلسلہ جاری ہے جس کی وجہ سے کاشتکاروں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے لوڈ شیڈنگ میں اضافہ کی وجہ سے ٹیوب ویل بھی چلانے ممکن نہیں رہے جس کی وجہ سے فصلوں کو پانی نہیں لگایا جارہا ۔ گندم کی فصل اور چارہ سمیت دیگرفصلوں کو اس وقت پانی کی اشد ضرورت ہے مگر آب پاشی کے لئے کاشتکاروں کو پانی کی ایک بوند بھی دستیاب نہیں ہے ، پانی کی قلت کے باعث گندم کی فصل سمیت چارہ اور دیگر فصلیں متاثر ہورہی ہیں ۔ ٹبہ کوٹ سے نمائندہ پاکستان کے مطابق بارہ میل و گردونواح جناح آبادی ،جودھ پور، مست پور ،موہری پور،رکن والا اوررائے پو ر میں لوڈ شیڈنگ نے عوام کو اذیت سے دو چار کر دیا ہے۔ دو کوٹہ سے نمائندہ پاکستان کے مطابق 15مارچ سے گرمی کی شدت میں روز بروز اضافہ ہو رہا ہے جیسے جیسے گرمی کی شدت بڑھ رہی ہے اسی طرح غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ میں بھی اضافہ ہو رہا ہے بجلی نہ ہونے سے دن کو شہری بلبلا کو رہ جاتے ہیں جبکہ رات کو مچھر سکون بر باد کر دیتے ہیں بڑھتی ہوئی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ شہریوں کے لیے عذاب بن چکی ہے۔ چشتیاں سے نمائندہ پاکستان کے مطابق بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ میں اضافہ ہونے کی وجہ سے کاروباری زندگی مفلوج ہو کر رہ گئی ہے بلکہ وقفہ وقفہ سے لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے صارفین پریشان ہیں ۔ادھر حکمرانوں کے جھوٹے دعوے عوام کو پریشان کیے ہوئے ہیں۔ جبکہ ابھی موسم میں کوئی خاص تبدیلی نہیں ہوئی اس کے باوجود لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ قریباً 8گھنٹے ہو گیا اگر موسم مکمل تبدیل ہوا تو پھر لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ کتنے گھنٹوں تک تجاوز کرے گا ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر