پاکستان میں پانی کی کمی اجتماعی مسئلہ ‘ ملکر حل کرنا ہوگا‘ وقار احمد

پاکستان میں پانی کی کمی اجتماعی مسئلہ ‘ ملکر حل کرنا ہوگا‘ وقار احمد

ملتان(جنرل رپورٹر)نیسلے پاکستان کے کارپوریٹ امور کے سربراہ وقار احمد نے کہا ہے کہ پاکستان میں پانی کی کمی کا مسئلہ کسی ایک ادارے تک محدود نہیں ہے بلکہ یہ ایک اجتماعی مسئلہ ہے اس کے حل کے لئے اجتماعی طور پر کام کرنا ہوگا۔ ’’وہ پانی ضائع کیوں کریں‘پاکستان میں پانی (بقیہ نمبر15صفحہ12پر )

کے وسائل پر از سر نو غور‘‘ کے موضوع پر منعقدہ سیمینار سے خطاب کررہے تھے ۔نیسلے پاکستان نے سٹین ایبل ڈویلپمنٹ پالیسی انسٹی ٹیوٹ کے اشتراک سے یہ سیمینار منعقد کیا تھا۔ سیمینار میں بتایا گیا کہ ایشیائی ترقیاتی بنک کے مطابق پاکستان ان ممالک کی فہرست میں شامل ہے جہاں پانی کی شدید کمی ہے۔ یہاں ہر شخص کو سالانہ ایک ہزار مکعب میٹر پانی دستیاب ہے۔ ملک میں گندے پانی کے انتظام اور پانی کے موجودہ ذخائر اور ذرائع کے تحفظ سے متعلق خدشات کے مسائل پر روشنی ڈالی گئی۔پی س آر ڈبلیو آر کے چےئرمین محمد اشرف‘ سینئر ڈائریکٹر ڈبلیو ڈبلیو ایف ڈاکٹر ربنواز‘ ایس ڈی پی آئی کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر عابد سلہری اور قائد اعظم یونیورسٹی کے وزیٹنگ پروفیسر ڈاکٹر وولف گینگ پیٹرزنگل سمیت معروف ماہرین نے سیمینار میں پانی کی بابت بحث کی اور تمام سٹیک ہولڈرز نے اس بات پر اتفاق کیا کہ اس مسئلے سے نمٹنے کیلئے ملٹی سٹیک ہولڈرز کا نقطہ نظر اپنایا جائے۔

وقار احمد

مزید : ملتان صفحہ آخر