ڈہرکی‘سیپکو ایس ڈی او ‘ عملہ کیخلاف مظاہروں کا تیسرا دن‘ دھرنا

ڈہرکی‘سیپکو ایس ڈی او ‘ عملہ کیخلاف مظاہروں کا تیسرا دن‘ دھرنا

ڈہرکی(نامہ نگار) ڈہرکی میں سیپکو کی زیادتیوں کے خلاف آج تیسرے روز بھی ، شہزاد، رضا خان، پیر بخش، محمد حفیظ،یامین اور میڈم نسرین ذوالفقار اوردیگر کی قیادت میں درجنوں مرد اور خواتین اپنے معصوم بچوں سمیت ڈہرکی سیپکو انتظامیہ کی زیادتیوں لاکھوں روپوں کے غلط اور زائد ریڈنگ کے (بقیہ نمبر39صفحہ12پر )

بلوں کے جاری کرنے اور عظیم کالونی میں ایک ماہ سے بجلی بند کرنے کے خلاف آج تیسرے روزمرد اور خواتین کا اپنے معصوم بچوں سمیت سڑکوں پر نکل آئے سخت احتجاجی مظاہرہ ایس ڈی او سیپکو ڈہرکی مظاہرین پر چڑھ دوڑے مرد اور خواتین سے بدتمیزی دوبارہ احتجاج کرنے کی صورت میں عظیم کالونی میں لگے ہوئے بجلی کے کھمبے تاریں اور ٹرانسفامراتارنے کی دھمکیاں دے کر نجی گارڈوں کو بلوا کر مظاہرین کو آفس سے زبردستی باہر باہرنکلوا دیا اور آفس کے مین گیٹ بند کرادیئے گئے مظاہرین کا ایس ڈی او اور دیگر عملہ کے خلاف مین گیٹ کے باہر احتجاجی مظاہرہ اور دھرنا شدیدنعرے بازی کی گئی تپتی دھوپ میں کئی گھنٹوں تک احتجاجی مظاہرہ جاری رکھنے پرکئی معصوم بچوں اور خواتین کی گرمی کی شدد سے انکی حالت غیر ہوگئی جس کے سبب مظاہرہ کو ختم کیا گیا مظاہرین نے ڈہرکی کے صحافیوں کو سیپکو ایس ڈی او دیگرعملہ کی زیادتیوں کے سلسلہ میں تفصیلات بتا تے ہوئے کہا ہے کہ ڈہرکی سیپکو واپڈا کا ایس ڈی او اور دیگر عملہ کئی سال سے ہمارے گھروں کے بلوں میں ہر ماہ ہزاروں روپے اضافی رقم اور زائد ریڈنگ ڈ ال کر لاکھوں روپوں کے نا جائز بل بھیج رہے ہیں ہماری باربار شکایت کرنے کے باوجود بل درست کرنے کے بجائے الٹا ہماری بجلی کی سپلائی بند کردی جاتی ہے اور بھاری رشوت لینے کے بعدچنددن سپلائی بحال کرکے دوبارہ رشوت لینے کی خاطر ٹرانسفارمر کے مین جمپرکاٹ کرسپلائی بندکردیتے ہیں انہوں نے اعلی حکام سے ڈہرکی کے ایس ڈی او اوردیگر عملہ کی مظاہرین خواتین سے بدتمیزی کا نوٹس لینے اور ناجائز طور پر بھیجے جانے والے غلط اور زائد ریڈنگ والے بلوں کی درستگی اور عظیم کالونی میں بجلی کی سپلائی کو بحال کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔

میپکو

مزید : ملتان صفحہ آخر