زرعی سائنسدان کپاس کو منافع بخش بنانے کیلئے کردارادا کریں ‘ ڈاکٹر خالد عبداﷲ

زرعی سائنسدان کپاس کو منافع بخش بنانے کیلئے کردارادا کریں ‘ ڈاکٹر خالد ...

ملتان ( سپیشل رپورٹر)حکومت ملکی سطح پر بائیوٹیکنالوجی سمیت سائنسی بنیاد پر زرعی طور طریقے اپنانے اور ملک میں بیج کی صنعت کو ترقی دینے کے لیے مکمل پر عزم ہے‘زرعی سائنسدانوں کو چاہیئے کہ وہ کپاس کی فصل کو منافع بخش بنانے اور اس کی پیداوار میں اضافہ اور فصل کو کیڑوں مکوڑوں ، (بقیہ نمبر41صفحہ7پر )

بیماریوں ، خاص کر گلابی سنڈی کے سدباب کے لیے بائیوٹیکنالوجی کو کپاس کی تحقیق وترقی کے لیے استعمال کر یں ، یہ بات کاٹن کمشنر ڈاکٹر خالد عبد اللہ نے پاکستان سنٹرل کاٹن کمیٹی کی زرعی تحقیقاتی کمیٹی کے آخری روز کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی ۔ ڈائریکٹر ریسرچ پاکستان سنٹرل کاٹن کمیٹی ڈاکٹر تصور حسین ملک نے شرکاء کو بتایا کے سال 2017-18 میں پاکستان سنٹرل کاٹن کمیٹی کے نیشنل کوارڈینیٹڈ ویرائٹل ٹرائل(NCVT) میں پبلک سیکٹر اور پرائیویٹ سیکٹر سید کمپنیز کی کپاس کی113نئی اقسام جن میں 99 اقسام بی ٹی (پبلک سیکٹر 46 اور 53پرائیوٹ سیکٹر) اور14 نان بی ٹی اقسام شامل کی گئی ہیں اور ان کی پیداواری صلاحیت اور ریشہ کی خصوصیات کے حوالہ سے جانچنے کے لیے ملک کے چاروں صوبوں کے مختلف علاقوں میں کاشت کی جائیں گی۔اجلاس میں سنٹرل کاٹن ریسرچ انسٹی ٹیوٹ، ملتان کے ڈائریکٹر، ڈاکٹر زاہد محمود ، کاٹن ریسرچ انسٹی ٹیوٹ، سکرنڈ کے ڈائریکٹر ، ڈاکٹر وارث سنجرانی ، ڈائریکٹر ریسرچ (پی سی سی سی) ڈاکٹر تصور حسین ملک, ڈائریکٹر مارکیٹنگ اینڈ اکنامک ریسرچ (پی سی سی سی) ڈاکٹر محمد علی تالپور، ڈاکٹر منظور حسین منج انچارچ کاٹن پروگرام NIAB ، پروفیسرڈاکٹر ادریس احمد CEMB، لاہور ، ڈاکٹر محبو ب پرنسپل سائنٹسٹ NIBGE ، فیصل آباد ،ڈاکٹر کاشف ریاض پرنسپل سائنٹسٹNIAB ، ڈاکٹر شاہد منصور ڈائریکٹرNIBGE، ڈاکٹر اقبال بندیشہ ہیڈ پلانٹ بریڈنگ اینڈ جینیٹکس اسلامیہ یونیورسٹی ، بہاولپور ، ڈاکٹر سید بلال حسین اسسٹنٹ پروفیسر ، انسٹیٹیوٹ آف مالیکیولر اینڈ بائیو ٹیکنالوجی بہاء الدین زکریا یونیورسٹی، ملتان ڈاکٹر الطاف شیر، کاٹن ریسرچ انسٹیٹیوٹ ملتان ، طارق خانزادہ منظور کھوڑو ، شیخ عذرہ ریاض کے علاوہ چاروں صوبوں کے زرعی تحقیقی مراکز کے زرعی سائنسدانوں ، ترقی پسند کاشکاروں اور پرائیویٹ سیڈ سیکٹرز کے نمائندوں نے اجلاس میں خاص طور پر شرکت کی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر