عافیہ صدیقی کے کراچی سے اغوا کو 14 سال مکمل ہوگئے

عافیہ صدیقی کے کراچی سے اغوا کو 14 سال مکمل ہوگئے
عافیہ صدیقی کے کراچی سے اغوا کو 14 سال مکمل ہوگئے

  

کراچی (این این آئی) ڈاکٹر عافیہ کی ہمشیرہ اور عافیہ موومنٹ کی رہنما ڈاکٹر فوزیہ صدیقی نے 31 مارچ کو قوم کی بیٹی عافیہ کے کراچی سے اغواءاور امریکہ کے حوالے کرنے کے 14 سال مکمل ہونے کے موقع پر اپیل کی ہے کہ ائمہ کرام جمعہ کے خطبہ اور نماز کے بعد اجتماعی دعاﺅں میں ڈاکٹر عافیہ کی امریکی جیل سے جلد رہائی اور وطن واپسی کیلئے خصوصی دعائیں کرائیں۔

عافیہ موومنٹ میڈیا انفارمیشن سیل سے جاری کردہ بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ31 مارچ ملک کی تاریخ کا ایک اور” سیاہ دن“ ہے جب ایک بے گناہ پاکستانی ماں کو ایک جھوٹے اور من گھڑت الزام کی بنیاد پر اس کے تین کمسن بچوں سمیت اغو اء کرکے امریکی حکام کے حوالے کیا گیا اور بعد ازاں انسانی سمگلنگ کے جرم کا ارتکاب کرتے ہوئے غیرقانونی طور پر افغانستان منتقل کردیا گیا تھا۔ڈاکٹر فوزیہ نے مزید کہا کہ عافیہ کا خواب تعلیمی انقلاب کے ذریعہ ملک میں تبدیلی لانا تھا۔ عافیہ موومنٹ کی برسوں کی جدوجہد کا مقصد عافیہ کی واپسی اور اس کے خواب کی تکمیل کرنا ہے۔

برصغیر کی تاریخی تلخ یادوں سے انکار نہیں،ملکوں پرقبضہ کرکے کالونی بنانے کا دور گزرچکا،ہمیں پرامن پاکستان اور بہترمستقبل چاہیے:فضل الرحمان

عافیہ موومنٹ کے رضاکار اور ڈاکٹر عافیہ کے سپورٹرز ملک بھرمیں پرامن ”یوم سیاہ“ مناکرحکمرانوں اور سرکاری حکام کو عافیہ کو وطن واپس لانے کے فریضہ کی ادائیگی کا احساس دلائیں گے۔ آج شام 5 بجے کراچی پریس کلب کے باہر دیوہیکل ”انصاف کی مشعل“ روشن کی جائے گی۔پاکستان کی طرح دنیا کے دیگر کئی ممالک میں بھی انسانیت و انصاف پسند اور ڈاکٹر عافیہ کے حامی عافیہ کی امریکی جیل سے رہائی اور وطن واپسی کیلئے احتجاجی مظاہرے اور دیگر پروگرامات کا انعقاد کررہے ہیں۔

مزید : کراچی