’20 سال کی عمر میں میں حاملہ ہوگئی، میرے ماں باپ نے مجھے برہنہ کرکے مسلسل 16 سال تک یہ کام کیا اور بالآخر آج۔۔۔‘ خاتون نے زندگی کی ایسی کہانی سنادی کہ انسان کے رونگٹے کھڑے کردے

’20 سال کی عمر میں میں حاملہ ہوگئی، میرے ماں باپ نے مجھے برہنہ کرکے مسلسل 16 ...
’20 سال کی عمر میں میں حاملہ ہوگئی، میرے ماں باپ نے مجھے برہنہ کرکے مسلسل 16 سال تک یہ کام کیا اور بالآخر آج۔۔۔‘ خاتون نے زندگی کی ایسی کہانی سنادی کہ انسان کے رونگٹے کھڑے کردے

  

برازیلیا(مانیٹرنگ ڈیسک) برازیل میں ایک لڑکی کو اس کے خاندان نے ایک مرد کے ساتھ ناجائز تعلقات استوار کرنے اور حاملہ ہونے کی ایسی بھیانک سزا دی کہ جان کر رونگٹے کھڑے ہو جائیں۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق ماریا لوسیا ڈی ایلمیڈا نامی لڑکی کی عمر اس وقت 20سال تھی جب اس نے ایک شخص کے ساتھ تعلق استوار کیا اور حاملہ ہو گئی۔ اس کے گھر والوں کو اس بات کا علم ہوا تو انہوں نے اسے برہنہ کرکے ایک تنگ و تاریک کمرے میں بند کر دیا۔

رپورٹ کے مطابق اسے 16سال تک اس کمرے میں قید رکھا گیا۔ کمرے میں بجلی تھی اور نہ ہی ٹوائلٹ۔ اس نے 16سال اسی حالت میں اس گھپ اندھیر کمرے کے فرش پر گزارے۔ جب اس کے ہاں بچے کی پیدائش ہوئی تو بچے کو اس کا باپ اور بھائی لے گئے اور ایک بے اولاد جوڑے کو دے دیا۔ اتنے عرصے بعد یہ معاملہ منظرعام پر آنے پر پولیس جب ان کے گھر پہنچی تو یہ دیکھ کر دنگ رہ گئی کہ لڑکی کا تنگ و تاریک کمرہ غلاظت سے اٹا پڑا تھا۔ انہوں نے اس کے بھائی جواﺅ ڈی ایلمیڈا کو گرفتار کر کے عدالت میں پیش کر دیا ہے، تاہم ملکی قانون کے تحت اسے اس جرم کی زیادہ سے زیادہ سزا8سال قید ہو سکتی ہے۔ یہ انسانیت سوز واقعہ برازیل کے ایک دورافتادہ قصبے اروبریٹاما (Uruburetama)میں پیش آیا ہے۔ لڑکی کی ماں نے اپنی بیٹی کی اس سزا پر احتجاج کیا لیکن اس کی ایک نہ سنی گئی اور آج وہ نفسیاتی مریض بن کر بستر پر پڑی ہے۔

’اس خاتون نے مجھے سمگلروں کے ذریعے اپنے گھر منگوایا اور پھر دو سال تک مجھے قید کرکے حاملہ کرنے کی کوشش کرتی رہی کیونکہ۔۔۔‘

پولیس آفیسرز کا کہنا تھا کہ ”لڑکی نے جونہی ہمیں دیکھا وہ دوڑ کر آئی اور ایک آفیسر سے لپٹ گئی اور چیخیں مار کر رونے لگی۔ اسے کمپاﺅنڈ کے ایک ایسے کمرے میں بند کیا گیا تھا جہاں وہ جتنی بلند آواز میں بھی چلاتی اور مدد کے لیے پکارتی اس کی آواز کمپاﺅنڈ سے باہر نہیں جا سکتی تھی۔ یہی وجہ ہے کہ اتنے طویل عرصے تک اس کا کسی کو علم نہیں ہو سکا۔ لڑکی انتہائی کمزور تھی اور اسے بولنے میں بھی دشواری پیش آ رہی تھی۔ تاہم اب ہسپتال میں اس کی صحت بہتر ہو رہی ہے۔اس کے ہاں پیدا ہونے والے بیٹے کی بھی شناخت کر لی گئی ہے جو اب 15سال کا ہو چکا ہے۔ہمیں امید ہے کہ جلد ماں بیٹے کو آپس میں ملوا دیا جائے گا۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس