10سال قبل قتل ہونیوالی لڑکی زندہ نکل آئی، نام تبدیل کرکے شادی کرلی

10سال قبل قتل ہونیوالی لڑکی زندہ نکل آئی، نام تبدیل کرکے شادی کرلی
10سال قبل قتل ہونیوالی لڑکی زندہ نکل آئی، نام تبدیل کرکے شادی کرلی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

جہلم (ویب ڈیسک) دس سال قبل قتل ہونے والی خاتون 4 بچوں کے ساتھ زندہ نکل آئی، گرفتار ملزمہ عاصمہ طلاق لئے بغیر نکاح پر نکاح کرکے نئے شوہر کے ساتھ دبئی میں روپوش ہوگئی تھی۔

تفصیلات کے مطابق پھلائیاں کی منظور بیگم نے پولیس تھانہ سوہاوہ کو 10 سال قبل ایک درخواست دی اور اپنے داماد اور اس کے بھائیوں کے خلاف الزام لگایا کہ اس نے ان کی بیٹی عاصمہ کو قتل کر دیااور نعش غائب کر دی ہے جس پر پولیس نے منظور بیگم کے داماد اور اس کے بھائیوں کے خلاف مقدمہ درج کیا اور تفتیش شروع کر دی۔

مقدمہ کے اندراج کے چند ماہ بعد ہی مدعیہ نے ملزمان کے ساتھ راضی نامہ کر لیا تاہم پولیس نے خفیہ تفتیش شروع کی اور مقتولہ کے سابقہ عاشق اور اس کے نیلم نامی لڑکی سے نکاح کا علم ہونے پر تفتیش کا دائرہ وسیع کیا اور دس سال بعد مقتولہ عاصمہ جس نے نام تبدیل کر کے نذیر نامی لڑکے سے شادی کر لی تھی اور دوبئی روپوش ہو گئی تھی ان کو گرفتار کر لیا اور ملزموں کے خلاف مقدمہ درج کیا۔

مزید : علاقائی /پنجاب /جہلم