"میں وزیراعظم سے اپیل کروں گا کہ وہ میرشکیل الرحمان کو۔۔۔"اپوزیشن کے بعد عامر لیاقت حسین بھی بول پڑے

 "میں وزیراعظم سے اپیل کروں گا کہ وہ میرشکیل الرحمان کو۔۔۔"اپوزیشن کے بعد ...
 

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)جنگ اور جیو گروپ کے مالک میر شکیل الرحمان کے بھائی میر جاوید الرحمان کے انتقال پر اپوزیشن کے بعد اب حکومتی رکن اسمبلی ڈاکٹر عامر لیاقت بھی بول پڑے۔ سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ان کے اہلخانہ سے اظہارافسوس کرتے ہوئے لکھا ہے کہ "میں وزیر اعظم سے اپیل کروں گا کہ وہ میر شکیل الرحمان کو اپنے بھائی کے جنازے میں شرکت کیلئے رہائی کے احکامات صادر فرمائیں۔ مجھے یقین ہے کہ وزیراعظم بڑے پن کا مظاہرہ فرمائیں گے۔ اللہ تعالیٰ ہم سب کو مشکل گھڑی سے دور رکھے۔ آمین"

عامر لیاقت حسین نے میر جاوید الرحمان کے اہلخانہ سے اظہار افسوس کرتے ہوئے کہا کہ" میر جاوید الرحمان کی اہلیہ غزالہ جاوید، صاحبزادے یوسف رحمان، والدہ محمودہ خلیل، بھائی میر شکیل اور بھتیجے ، بھتیجیوں ابرہیم، اسماعیل، اسحاق، اسما، بہن عائشہ بہن سب سے تعزیت کااظہارکرتا ہوں۔ ہم سب کو اس جہاں سے جانا ہے۔ اخبار جہاں میں ہم سب کا نام معینہ مدت تک کیلئے لکھا ہوا ہے بس!"

عامر لیاقت نے کہا"میر جاوید رحمن نے ہمیہ اپنی رائے اور فکر کو مقدم رکھا، جہاں اختلاف کیا وہاں اختلاف کیا، میر شکیل نے ہمیشہ اپنے بڑے بھائی کااحترام کیا، کاش محترمہ شیریں مزاری کے خط کے بعد میر شکیل کو ایک دن کیلئے رہا کردیا جاتا تو وہ اپنے بھائی سے رخصت کے وقت مل لیتے"

عامر لیاقت کے مطابق "میر جاوید صاحب جب کبھی ملتے ان سے گفتگو کرکے بہت کچھ سیکھنے کو ملتا، مذہب ہو یا صحافت، سیاست ہو یا ثقافت، میر جاوید رحمن صحافت میں اصلاحات کے بانی تھے۔ میر ابراہیم کی تربیت بھی انہوں نے کی، میں میر جاوید صاحب کی والدہ بیگم میر خلیل الرحمان سے دلی تعزیت کااظہارکرتا ہوں۔

عامر لیاقت نے مزید کہا کہ "میر جاوید رحمن اپنے والد کے ہم شکل ہی نہیں بلکہ سیرت و کردار میں بھی میر خلیل الرحمن مرحوم سے کم نہ تھے، آج ایک روشن باب بند ہوگیا، آج اخبارِ جہاں کا مدیر اس جہاں سے کوچ کر گیا، آج اس جہاں سے اُس جہاں کا سفر شروع ہوا جاوید آاحب کا مگر یوسف ان کا اثاثہ ہے اور رہے گا"

مزید :

قومی -