ولی الرحمن اگرچہ امریکہ کو مطلوب تھا مگر غیرقانونی طور پر نشانہ بنایاگیا، ساجد میر

ولی الرحمن اگرچہ امریکہ کو مطلوب تھا مگر غیرقانونی طور پر نشانہ بنایاگیا، ...

  

لاہور(سٹاف رپورٹر) مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے سربراہ سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے طالبان راہنما ءولی الرحمن کو ڈرون حملے کے ذریعے نشانہ بنانے پر اپنے تبصرہ میں کہا ہے کہ اگرچہ وہ امریکہ کو مطلوب تھا مگر اسے غیر قانونی اور غیر انسانی طریقے سے ٹارگٹ کیا گیا۔ مجرم جتنا بھی بڑا ہو اسے عدالت کے ذریعے ہی سزا ملنی چاہیے۔ خودکش حملے اور ڈرون حملے دونوں قابل مذمت ہیں۔ دونوں طریقے غیر قانونی اور غیر انسانی ہیں۔ انہوں نے ا قوام متحدہ کے ادارہ برائے انسانی حقوق کی ہائی کمشنر نیوانیتھم پلے کی طرف سے پاکستان میں ڈرون حملوں کو غیر منصفانہ اور قابل مذمت قرار دینے کے بیان کو سراہا اور کہا کہ اگر دہشت گردی کیخلاف جنگ اور فوجی آپریشنز میں ڈرون طیاروں کے استعمال اور انسانی حقوق کی پامالی غلط ہے تو پھر اقوام متحدہ امریکہ کے خلاف ضابطے کے تحت کارروائی کی جرات کرنی چاہیے۔

مزید :

صفحہ آخر -