اوبامہ کے دعوے کے باوجود القاعدہ کاخطرہ برقرارہے

اوبامہ کے دعوے کے باوجود القاعدہ کاخطرہ برقرارہے

واشنگٹن (اظہر زمان، بےورو چےف) القاعدہ کے خاتمے کے حوالے سے صدر بارک اوبامہ جتنی روشن تصوےر پےش کرتے ہےں سےکورٹی اور دہشت گردی کے ماہرےن اس سے پوری طرح مطمئن نہےں ہےں سےنےٹ کی انٹےلی جنس کمےٹی مےں اےف ئی آئی کے ڈائرےکٹر رابرٹ ملر اور سپےشل آپرےشنز کمانڈ کے موجودہ ڈائرےکٹر اےڈمرل ولےم میکریون نے جو کہا اور اےوان نمائندگان کی آرمڈ سروسز کمےٹی مےں رےٹائرڈجنرل جےمز مےٹس نے اپنی آخری شہادت مےں جو اظہار خےال کےا اس سے تو یہ تاثر ملتا ہے کہ القاعدہ نے اپنی حکمت عملی مےں تبدےلی پےدا کر لی ہے اور وہ اپنا زےادہ تر اےجنڈا فرنچائز کے نظام کے ذرےعے پورا کر رہی ہے جنرل کےن اور مےھتیو اولسن بھی اس قسم کی سوچ رکھتے ہےں۔

حقےقت ےہ ہے کہ صدر اوبامہ امرےکی عوام کو ےہ نوےد دے رہے ہےں کہ القاعدہ اب شکست کے راستے پر گامزن ہے جبکہ سےکورٹی کے ماہرےن کانگرےس کو بتا رہے ہےں کہ دہشت گردی کا ےہ نےٹ ورک اب پھےلتا جا رہا ہے اور اےک بار پھر امریکہ کے اندر زبردست تباہی کرنے کی صلاحیت پےدا کر چکا ہے سےکورٹی ماہرےن کے مطابق امرےکہ سے باہر بھی یمن، شام ، عراق، مالی، صومالیہ اور افغانستان مےں القاعدہ کی فرنچائز تنظےمےں سرگرم عمل ہےں دہشت گردی کے ماہرےن کا کہنا ہے کہ پاکستان مےں ڈرون حملوں کا ٹارگٹ القاعدہ کے لیڈر اور ان کی فرنچائز طالبان ہے اور اوبامہ انتظامےہ کی نئی حکمت عملی کے مطابق مزید حملے کرنے کےلئے زےادہ احتےاط برتی جائے گی اور ہر طرح سے مکمل اطمےنان کرنے کے بعد ٹارگٹ کو نشانہ بناےاجائے گا تاکہ معصوم شہری اس کی زد مےں نہ آئےں ان ماہرےن کا کہنا ہے کہ پاکستان مےں انتخابات مکمل ہونے کے بعد جو پہلا ڈرون حملہ ہوا ہے وہ اس نئی پالےسی کا ثبوت ہے کہ اس مےں صرف اےک گھر مےں مقیم طالبان کے لیڈر ہلاک ےا زخمی ہوئے ہےں اور کوئی معصوم شہری اس کی زد مےں نہےں آےا ماہرےن کے مطابق اس وقت القاعدہ کی تےن فرنچائز بہت سرگرمی سے کام کر رہی ہےں القاعدہ اِن عراق نے امرےکی فوج کے انخلاءکے بعد اپنے اپ کو پھر منظم کر لےا ہے اور شام مےں جنگجو بھےج رہی ہے القاعدہ اِن اسلامک مغرب (AQIM) نے شمالی افرےقہ مےں انصار اشرےعہ کے ساتھ الحاق کر لےا ہے جس کے تحت لیبیا مےں امرےکی سفارت خانے پر حملہ ہوا تھا تےسری اہم فرنچائز AQAP ہے جو ےمن مےں کام کر رہی ہے جس نے 2009ءمےں عمر فاروق عبدامطلب کے اےک ائیر لائن پر ناکام حملے کو سپانسر کےا تھا جو مغربی دنےا میں انڈروئےر بمبار کے نام سے جانا جاتا ہے اےف بی آئی کے ڈائرےکٹر رابرٹ ملر نے سےنےٹ کی انٹےلی جنس کمےٹی کو بتاےا ہے کہ ےمن کی تنظےم AQAP جو ہوائی جہازوں پر حملوں کی منصوبہ بندی کرتی رہی ہے کچھ عرصے سے خاموشی ہے لیکن اس کے ارکان بدستور موجود ہےں اس لئے وہ کسی وقت بھی خطرہ پےدا کر سکتے ہےں دہشت گردی کی روک تھام کے نےشنل سنٹر کے سربراہ مےتھیو اولسن سمجھتے ہےں کہ القاعدہ امرےکہ کے اندر حملے کرنے کے لئے رضا کار بھرتی کرنے مےں مصروف ہے مسٹر اولسن نے کانگرےس مےں اپنی شہادت مےں بتاےا کہ پاکستان کے اندر موجود القاعدہ کی مرکزی قےادت اور ےمن مےں اس کی فرنچائز AQAP مل کر امرےکہ مےں پہلے سے موجودہ اپنے ہم خےال شدت پسند سوچ رکھنے والے شہریوں کو تحزےبی کاموں کے لئے آمادہ کر رہی ہے

رےٹائرڈ جنرل جےمز مےسئن نے اےوان کی آرمڈ سروسز کمیٹی کو اپنی شہادت مےں بتاےا ہے کہ القاعدہ اےک حقےقی خطرہ ہے سپےشل آپرےشنز کمانی کے سربر اہ اےڈمرل ولےم مےکرےون کا کہنا تھا کہ صرف القاعدہ کے نےٹ ورک کو ختم کرنے کی بجائے ان کے ہم خےال مذہبی انتہا پسندوں پر بھی نظر رکھنی ہو گی سےنےٹ کی کمےٹی مےں اپنی شہادت مےں اےڈمرل مےکرےون نے بتاےا کہ القاعدہ شمالی افریقہ مےں بہت سرگرم ہے

مزید : صفحہ آخر