نیشنل پارٹی نے وزیراعلیٰ بلوچستان کی نامزدگی کااختیار نوازشریف کودیدیا

نیشنل پارٹی نے وزیراعلیٰ بلوچستان کی نامزدگی کااختیار نوازشریف کودیدیا

  

لاہور( این این آئی)مسلم لیگ (ن) کے سربراہ اور نامزد وزیر اعظم محمد نواز شریف کی زیر صدارت بلوچستان میں وزیر اعلیٰ کی نامزدگی کے حوالے سے پارلیمانی پارٹی کا اجلاس ہوا جس میں نیشنل پارٹی نے وزیر اعلیٰ بلوچستان کی نامزدگی کا اختیار نواز شریف کو سونپ دیا ۔ اجلاس کے بعد ثنا اللہ زہری اور جنرل (ر) عبد القادر بلوچ نے نواز شریف سے الگ ملاقات کی جس میں مختلف امورپر تبادلہ خیالات کیا گیا ۔تفصیل کے مطابق اجلاس نواز شریف کی صدارت میں جاتی عمرہ رائیونڈ میں ہوا جس میں مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنماﺅں کے علاوہ بلوچستان سے سردار ثناءاللہ زہری ، عاصم کرد ، عبداللہ ماجد ابڑو، میر جان محمد جمالی ، طاہر محمود خان ، سردار محمد ناصر ، نوابزادہ چنگیز مری، میر اظہار حسین کھوسو ، اکبر عکسانی ، جان کمال خان عالیانی ، محمد خالق گورچانی ‘ خلیل بھٹو ، جنرل (ر) عبدالقادر بلوچ، میر دوستین ڈومکی ، میر عاصم رند ، سرفراز بگٹی ، سرفراز ڈومکی اور دیگر نے شرکت کی ۔ بلوچستان میں مسلم لیگ (ن)کےساتھ حکومت سازی میں شریک نیشنل پارٹی کے میر حاصل بزنجو اور پختوانخواہ ملی عوامی پارٹی کے محمود خان اچکزئی سمیت دیگر رہنماﺅں نے بھی نواز شریف سے ملاقات ۔اجلاس اور ملاقاتوں میں بلوچستان میں حکومت سازی خصوصاً وزیر اعلیٰ بلوچستان کی نامزدگی پر تفصیلی طورہوا جبکہ نیشنل پارٹی نے مسلم لیگ (ن) کے سربراہ محمد نواز شریف کو وزیر اعلیٰ کی نامزدگی کا اختیار سونپ دیا ۔ بتایاگیا ہے کہ پارلیمانی پارٹی اجلاس کے بعد ثنا اللہ زہری اور جنرل (ر) عبد القادر بلوچ نے نواز شریف سے دوبارہ ملاقات کی ۔ عاصم کرد نے کہا کہ اجلاس میں وزیر اعلیٰ کی نامزدگی کا فیصلہ نہیں ہوا لیکن یہ فیصلہ افہام و تفہیم سے کر لیا جائے گا اور اسکے لئے دوبارہ ملاقات ہو گی ۔ نیشنل پارٹی کے سیکرٹری جنرل میر حاصل بزنجو نے رائیونڈ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعلیٰ بلوچستان کی نامزدگی کا اختیار نواز شریف کو دیدیا ہے ، نواز شریف سے ایک سیاسی تعلق ہے ان سے کبھی کوئی حساب کتاب نہیں کیا ۔ انہوںنے کہا کہ نیشنل پیپلز پارٹی اورپختوانخواہ ملی عوامی پارٹی کی طرف سے ڈاکٹر عبد المالک امیدوار ہیں، نیشنل پارٹی نے اپنی طرف سے وزیر اعلیٰ کی نامزدگی کا اختیار میاں نواز شریف کو دیدیا ہے اب نواز شریف جانیں اور انکی پارٹی جانے ۔ انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ مجھے مسلم لیگ (ن)کے اندرونی اختلافات بارے علم نہیں لیکن وزیر اعلیٰ کے معاملے پر ڈیڈ لاک کی صورتحال نہیں ۔ ثناءاللہ زہری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ تاحال وزیر اعلیٰ کے حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں ہوا ،قائد کو اپنے تحفظات سے آگاہ کر دیا ہے لیکن وہ جو بھی فیصلہ کریں گے قبول ہوگا ۔ وزیر اعلیٰ کے معاملے پر مسلم لیگ (ن)کے درمیان کوئی ڈیڈ لاک یا فارورڈ بلاک نہیں بن رہا ۔

مزید :

صفحہ اول -