خستہ حال 100سکولوں کی تعمیر نو کا منصوبہ ، 530ملین لاگت آئیگی

خستہ حال 100سکولوں کی تعمیر نو کا منصوبہ ، 530ملین لاگت آئیگی

لاہور(لیاقت کھرل) مالی سال 2016-17ء میں خستہ حال عمارتوں میں قائم شہر کے 200سے زائد سکولوں کی حالت زار کی بہتری کا جامعہ پروگرام شروع کیا جا رہا ہے ان سکولوں کیلئے پہلے مرحلے میں 530ملین کی گرانٹ اور دوسرے مرحلہ میں 1200 ملین کی گرانٹ سے سکولوں کی حالت زار کو تبدیل کیا جائے گا جس کی آئندہ بجٹ میں باقاعدہ منظوری حاصل کی جائے گی۔ اس میں پہلے مرحلہ میں 100سکولوں کی خستہ حال عمارتوں کو از سر نو تعمیر کیا جائے گا جبکہ دوسرے مرحلہ میں بھی 100 سکولوں کی حالت زار کو بہتر بنایا جائے گا جس میں پرائمری اور مڈل سطح کے سکولز کی تعداد زیاد ہ ہے ۔اس میں نان بجٹ سیلری (این ایس بی) فنڈز بھی استعمال کیا جائے گا، ذرائع نے بتایا ہے کہ محکمہ سکولز ایجوکیشن نے خستہ حال عمارتوں میں قائم 200ایسے سکولوں کی فہرست تیار کر کے محکمہ تعلیم کو بھجوا رکھی ہے۔ محکمہ سکولز ایجوکیشن کے ذرائع کا کہنا ہے کہ اگر ان سکولوں کی حالت زار کو بہتر بنایا جاتا ہے تو ان سکولوں میں انرولمنٹ کی (شرح) میں کئی گنا اضافہ ہو سکتا ہے محکمہ سکولز ایجوکیشن کے ذرائع کا کہنا ہے کہ مالی سال 2016-17 میں گزشتہ مالی سال کی نسبت محکمہ تعلیم اور بالخصوص سکولوں کی حالت زار تبدیلی کیلئے دو گنا زیادہ فنڈز مختص کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ اس میں پرائمری اور مڈل سطح کے سکولوں کی حالت زار کی جانب زیادہ توجہ دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ جس میں سکولوں کی چار دیواری کی مرمت، کلاس رومز کی مرمت اور فرنیچرز کی دستیابی کو زیادہ فوکس رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اس میں نان بجٹ سیلری سے بھی سکولوں کی حالت زار کی بہتری کیلئے خرچ کئے جائیں گے۔ جس کیلئے ای ڈی او تعلیم اور ڈی ای اوز نے سکولوں کے ہیڈ ماسٹروں کو باقاعدہ اجازت دے دی ہے۔ اس حوالے سے ای ڈی او تعلیم لاہور طارق رفیق کا کہنا ہے کہ اس مقصد کیلئے وزیر اعلیٰ پنجاب نے بجٹ میں خصوصی فنڈز دینے کا بھی حکم دے رکھا ہے۔ ای ڈی او نے مزید بتایا کہ اس پروگرام کے تحت بعض سکولوں کے کلاس رومز، بعض کی چار دیواری کی تعمیر اور فرنیچرز کی کمی کو پورا کیا جائے گا ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...