حکومت بھارت کے گھناؤنے چہرے کودنیا کے سامنے بے نقاب کرے، میاں مقصود

حکومت بھارت کے گھناؤنے چہرے کودنیا کے سامنے بے نقاب کرے، میاں مقصود

لاہور(پ ر)امیرجماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمد نے کہاہے کہ بھارتی پابندیوں سے مقبوضہ کشمیر میں نظام زندگی مفلوج ہوکر رہ گیا ہے۔ٹرین سروس،موبائل اور انٹرنیٹ سروس کئی روز سے معطل ہے۔مقبوضہ کشمیر میں حریت قیادت کی اپیل پربھارتی فوجیوں کے ہاتھوں شہید ہونے والے کشمیریوں کے خلاف مسلسل ہڑتالوں اور احتجاج کاسلسلہ جاری ہے۔مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کے مظالم انتہاکو پہنچ چکے ہیں مگر افسوس ناک اور شرمناک امر یہ ہے کہ اقوام متحدہ،عالمی برادر ی اور انسانیت کے علمبردار ممالک اس ساری صورتحال پرخاموش تماشائی بنے بیٹھے ہیں۔انہوں نے کہاکہ حکومت پاکستان کو چاہئے کہ وہ ہندوستان کے مظالم،بربریت اور تشدد کو عالمی سطح پر اٹھائے۔اس وقت تک جنوبی ایشیا میں امن قائم نہیں ہوسکتا جب تک مسئلہ کشمیر کاپائیدار اور پُرامن حل نہیں نکالاجاتا۔ہندوستان ہٹ دھرمی کی تمام حدود پار کرچکا ہے۔ترکی کے صدرایردوان کی ثالثی کی پیشکش کاجواب نہ دے کر بھارت نے یہ ثابت کردیا ہے کہ وہ عالمی برادری کی پروانہیں کرتا۔انھوں نے کہاکہ مقبوضہ وادی میں بھارت کی سات لاکھ سے زائد فوج کشمیری عوام کے حق خود ارادیت کی آوازکو دبانہیں سکی۔مقبوضہ کشمیر میں آزادی کی تحریک دن بدن زورپکڑتی جارہی ہے۔وہ وقت دور نہیں جب مقبوضہ کشمیر آزاد کشمیر کی طرح پاکستان کا حصہ بنے گا۔دنیا کواس حوالے سے اپنا مثبت کردار اداکرنا ہوگا۔انھوں نے کہاکہ کشمیر بھارت کااٹوٹ انگ نہیں بلکہ پاکستان کی شہ رگ ہے۔ہمارے تمام دریاکشمیر سے نکلتے ہیں اور پاکستان کے کھیتوں کوسیراب کرتے ہیں۔مسئلہ کشمیر کشمیریوں کی مرضی کے مطابق حل ہونا چاہئے

مزید : میٹروپولیٹن 1