سعودی قونصلیٹ میں ویزہ سٹیکر کا بحران، عمرہ ایجنٹ رُل گئے

سعودی قونصلیٹ میں ویزہ سٹیکر کا بحران، عمرہ ایجنٹ رُل گئے

لاہور(ڈویلپمنٹ سیل)اسلام آباد سعودی قونصلیٹ میں ویزہ سٹیکر کا بحران،رمضان المبارک میں لاکھوں عمرہ زائرین عمرہ ادائیگی سے محروم رہ جانے کا خدشہ،ڈراپ کمپنیوں نے زبردستی کوٹہ مسلط کر دیا ،ویزہ لگوانے والوں کی لائنیں،مافیا نے فی پاسپورٹ فیس 20ہزار تک وصول کرنا شروع کر دی سعودی قونصلیٹ خاموش،ملک بھر کے عمرہ ایجنٹ رُل گئے ،ایک طرف عمرہ ویزہ لگنا نا ممکن بنا دیا گیا تو دوسری طرف جو ویزے لگ رہے ہیں وہ ٹکٹوں کی عدم دستیابی کی وجہ سے ویزے ایکسپائر ہو رہے ہیں وزارت مذہبی امور بھی خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے ،ڈراپ کمپنیوں نے قونصلیٹ کے اہلکاروں کے ساتھ مل کر لوٹ مار شروع کر دی ہے، ویزے نہ لگنے کی وجہ سے ہمیں مکہ ،مدینہ میں روزانہ لاکھوں ریال کا نقصان ہو رہا ہے ٹریول ایجنٹ کی روزنامہ پاکستان سے خصوصی گفتگو،لاہور سے جاوید اختر ،فیصل آباد سے ندیم اقبال،،راولپنڈی سے مشتاق چٹھہ نے بتایا کہ عمرہ ویزہ ختم ہونے کا ڈرامہ کر کے عمرہ ایجنٹوں کو بلیک میل کیا جا رہا ہے سعودی حکومت نے کوئی کوٹہ نہیں لگایا پاکستانی ایجنٹوں نے مصنوعی قلت پیدا کر کے لوٹ مار کا بازار گرم کر رکھا ہے 50روپے پاسپورٹ فیس 5ہزار پھر 10ہزار اور اب 20ہزارروپے فی پاسپورٹ تک وصول کیے جا رہے ہیں ویزے نہ لگنے سے بڑی کمپنیوں کے روزانہ کی بنیاد پر کروڑوں کا نقصان ہو رہا ہے ۔

سٹیکر

مزید : صفحہ آخر