شدید ترین گرمی مین بجلی کی لوڈشیدنگ کا سلسلہ برقرار،2زندگیاں بھینٹ چڑھ گئیں

شدید ترین گرمی مین بجلی کی لوڈشیدنگ کا سلسلہ برقرار،2زندگیاں بھینٹ چڑھ گئیں

ملتان،وہاڑی،خانیوال، رحمن گڑھ،مظفرگڑھ، چوک سرور شہید،کرم پور ، راجن پور ،سمہ سٹہ،صادق آباد،حیدر آبادتھل،داجل،ترنڈہ محمد پناہ،کلروالی،گڑھ مہاراجہ،نور پور نورنگا،لیاقت پور(سٹاف رپورٹر، نمائندگان)ملتان سمیت جنوبی پنجاب بھر میں شدید ترین گرمی اور بجلی کی لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے جس کے نتیجہ میں معمولات زندگی درہم برہم ہوکر رہ گئے۔شدید گرمی اور لوڈشیڈنگ کے باعث مختلف واقعات میں2افراد جاں بحق ہوگئے(بقیہ نمبر57صفحہ12پر )

ملتان سے سٹاف رپورٹر کے مطابق میپکوریجن میں بجلی کا بدترین بحران جاری ہے۔ 66 کے وی بہاولپور یزمان ٹرانسمیشن لائن ٹرپ ہونے سے کئی گھنٹے تک بجلی کی فراہمی بند رہی۔ ملتان شہرمیں صارفین کی انفرادی شکایات میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔ شہر کے مختلف فیڈرز پر ٹرپنگ کا سلسلہ جاری رہنے سے روزہ داروں کوشدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ میپکو ریجن میں طلب کے مقابلے میں بجلی کی فراہمی ممکن نہیں بنا جا سکی۔ چھوٹے شہروں اور دیہات میں بدترین لوڈشیڈنگ رہی ۔اس بارے میں حکومت اور میپکو انتظامیہ کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے ہیں ۔دریں اثناء ملتان شہر کو بجلی فراہم کرنیوالے تمام فیڈرز اوورلوڈ ہوگئے ہیں۔ گرڈ سٹیشنوں پر نصب پاور ٹرانسفارمرز بھی اوورلوڈ ہوگئے۔ ٹرپنگ وولٹیج میں کمی معمول بن گئی۔ روزہ داروں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ ذرائع کے مطابق ملتان شہر میں درجنوں نئے فیڈرز کی منظوری ہونے کے باوجود ان کی تنصیب نہیں ہو سکی ہے۔ جس کی وجہ سے شدید گرمی پڑنے اور رمضان المبارک میں بجلی کی طلب میں غیر معمولی اضافہ ہونے پر سسٹم پر دباؤ پڑتے ہی ٹرپنگ ہوجاتی ہے۔ جس سے صارفین بالخصوص روزہ داروں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ ملتان شہر میں اس وقت 20 سے زائد نئے فیڈرز کی تنصیب کے کیس منظور ہوچکے ہیں۔ لیکن ان پر کام شروع نہیں ہو سکا ہے۔وہاڑی سے بیورو رپورٹ اور نامہ نگار کے مطابق واپڈا کی جا نب سے تروایح ، سحری اور افطاری کے اوقات میں بجلی کی طویل غیر اعلا نیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری رہا جس سے روزہ داروں کی مشکلات اور پریشانی میں اضافہ ہونے لگا ، جس پر عوامی سماجی اورشہری حلقوں با بر علی ، عبدالمجید ، اصغر علی ، اکبر علی ، امجد علی ، فراز علی ، آصف علی ودیگر نے احتجاج کرتے ہوئے حکومت سے بجلی کی طویل غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کے خاتمہ کا مطالبہ کیا ہے۔خانیوال سے بیورو نیوز کے مطابق یونین کونسل رحیم شاہ اورگردونواح کے چکوک میں بجلی کی غیراعلانیہ بندش نے غریب عوام کے چودہ طبق روشن کردئیے ہیں ،علاقے کے وائس چیئرمین یونین کونسل ملک ایاز میتلا اوردیگر سماجی ،عوامی حلقوں نے مطالبہ کیاکہ غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ اوربجلی کی فراہمی کویقینی بنایاجائے۔رحمن گڑھ سے نمائندہ پاکستان کے مطابق کچاکھوہ و گردونواح میں بجلی کی بار بار ٹرپنگ سے گھریلو سامان بھی جلنے لگا ۔عوام پانی کی بوند بوند کو ترس گئے ہیں گھروں میں رہنے والے بوڑھے ،بچے ،خواتین روزے دار بلبلا اٹھے بجلی کی شدید لوڈشیڈنگ اور ٹرپنگ سے اہل علاقہ بھی حکومت وقت کے خلاف غم و غصہ پایا جاتا ہے اظہار خیال کرتے ہوئے افتخار رشید ،عمرحیات سہو،اصغر سہیل چوہدری ،نثار بلوچ ،سردار اعظم ،نعیم ا ختر ،صداقت علی ،علی احسن ،حذیفہ ،سنی شہباز نے حکام بالا سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ۔مظفرگڑھ سے نامہ نگار کے مطابق ماہ صیام میں مظفرگڑھ ،خان گڑھ اور گر د و نواح میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ بڑھ گیا ۔منگل کے روز وقفہ وقفہ سے کئی کئی گھنٹے بجلی بند رکھی گئی ۔چوک سرور شہید سے نامہ نگار کے مطابق چوک سرور شہید اور گردونواح سے واپڈا کو100فیصد ریکوری کے باوجود 10سے 12گھنٹے کی بلا جواز لوڈشیڈنگ نے شہریوں کو شدید مشکلات کا شکار کر رکھا ہے جبکہ سحری و افطاری کے بعد تراویح کے اوقات میں بھی لوڈشیڈنگ کی جاتی ہے۔کرم پور سے نمائندہ پاکستان کے مطابق حکومتی اعلانات کے باوجود سحری و افطاری میں بجلی بند کی جا رہی ہے جس سے روزہ داروں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ سخت گرمی کی وجہ سے مساجد و گھروں میں پانی کی قلت پیدا ہورہی ہے مگر لوڈشیڈنگ بڑھتی جارہی ہے۔ شہریوں نے اس صورتحال پر احتجاج کرتے ہوئے اعلیٰ حکام سے اصلاح و احوال کا مطالبہ کیا ہے۔راجن پور سے ڈسٹرکٹ رپورٹر کے مطابق ضلع راجن پور میں رمضان المبارک کے باوجود غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کاسلسلہ جاری ،بجلی کی بندش کا نہ ہی کوئی شیڈول جاری کیا جاتا ہے اور نہ ہی واپڈا آفیسرز فون سننا گوارا کرتے ہیں۔سمہ سٹہ سے نامہ نگار کے مطابق سب ڈویژن خانقاہ شریف میں لوڈشیڈنگ کادرانیہ 16-18گھنٹہ ہوگیا۔صادق آباد سے نامہ نگا رکے مطابق گزشتہ صبح سات بجے اچانک بجلی کی سپلائی منقطع ہو گئی جو تقریبا دس گھنٹے سے زائد کا عرصہ گزرنے کے باوجود تاحال بحال نہ ہو سکی ہے جس کی وجہ سے میپکو فسٹ ڈویژن کے علاقوں مجاہد کالونی،مظہر فرید کالونی، ورند کالونی،جاوید کالونی سمیت ملحقہ علاقوں میں بجلی کی سپلائی منقطع ہے ،لائن سپریٹنڈنٹ محمد شاہد نے بتایا کہ گرڈ اسٹیشن میں فنی خرابی ہے جس کی وجہ سے بجلی کی سپلائی بند ہے مگر صبح سے رات تک بجلی کی سپلائی بند ہونے کی وجہ سے ایک طرف تو عوام پریشان ہیں جبکہ دوسری جانب مساجدمیں وضو کرنے کیلئے پانی ختم ہو گیا جبکہ سیوریج اور واٹرسپلائی کا نظام بھی معطل ہے شہریوں نے وفاقی وزیر پانی وبجلی خواجہ محمد آصف،وزیرمملکت عابد شیر علی، چےئرمین واپڈا ،چیف ایگزیکٹو میپکو ملتان اور ایس ای رحیم یارخان سے فرائض میں غفلت اور لاپرواہی برتنے والے میپکو افسران اور ملازمین کیخلاف کا روائی کا مطالبہ کیا ہے۔ حیدر آباد تھل سے نمائندہ پاکستان کے مطابق حیدرآبادتھل اور گرد نواح میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ 10سے بارہ گھنٹے کی جار ہی ہے جس سے روزہ داروں کو شدید مشکلات کا سامنا رہتا ہے ۔داجل سے نامہ نگار کے مطابق ماہ رمضان المبارک شروع ہوتے ہی شدید گرمی لو اور لوڈ شیڈنگ نے کسر نکال دی شدید گرمی کی وجہ سے روز ہ داروں کو مشکلات کا سامنا اوپر سے رہی سہی کثر واپڈا والوں نے نکال دی صبح سویرے ہی سورج نے آگ برسانا شروع کردی جبکہ درجہ حرارت 45سینٹی گریڈ رہا شدید گرمی کی وجہ سے سڑکیں سنسان جبکہ شہری روزے کی حالت میں واپڈا والوں پر برس پڑے شہریوں ،قاضی محمد سلیم ،محمد طفیل احمد شاہ ،شیخ عبدالغفار ،ملک نعمان ،ملک مجیب ،شان سلیم،قاضی عباس،عمران لنڈ ،محمد مظفر ،اسد سلیم ،محمد سرفراز مکڑ،محمد اسماعیل مکڑ،محمد ندیم ،جام ارشد پرارہ،جام زبیر اعجاز پرارہ نیمطالبہ کیا ہے کہ کم از کم رمضان المبارک کے ماہ میں تو لوڈشیڈنگ کو کم کیا جائے تاکہ روزہ داروں کی مشکلات کم کی جائے ۔ترنڈہ محمد پناہ سے نمائندہ خصوصی کے مطابق جن پور ،ٹھل حمزہ ،دیگر علاقوں میں میپکو کی طرف سے بجلی کی طویل لوڈشیڈنگ سے شہری پریشان ہیں تمام کاروبار ٹھپ ہو کر رہ گئے ہیں بجلی کی لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 16 سے 18 گھنٹے کر دیا گیا ہے شہریوں رانا قیوم عباس ،محمد الطاف ،شیخ محمد رمضان ،سید احمد حسن ،سید احمد محمود زیدی ،سید حمزہ زیدی ،محمد محسن ،محمد سرفراز ،سید کلیم رضوی ،اکبر شہزاد ،ایوب خاور ،ملک عثمان کھوکھر ، ملک غلام اصغر ،ملک غلام عباس ارائیں ،محمد شعیب ہاشمی ،محمد اویس ہاشمی ،عابد الیاس ،شکیل احمد ہاشمی ،دیگر نے شدید احتجاج کرتے ہوئے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔کلروالی سے نامہ نگار کے مطابق قیامت خیز گرمی اور جان توڑ لوڈشیڈنگ سے کلروالی میں ایک ہی روز دو افراد جن میں بستی عیسن والی کے رہائشی حکیم ندیم اپنی دکان پر جارہے تھے کہ گرمی کی شدت سے گر پڑے اور دم توڑ گئے دوسرے کلروالی سکول کے رہائشی میاں مسلم چھجڑا بھی گرمی کے ہاتھوں جان کی بازی ہار گئے اور اس دنیا فانی سے کوچ کر گئے مرحومین کا نماز جنازہ کے بعد سپرد خاک کردیا گیا ۔گڑھ مہاراجہ سے نامہ نگار کے مطابق شہریوں میں ڈاکٹر شفیق ،ملک جیلانی،نوید انجم،عمران اور دیگر نے اعلی حکام سے فوری نوٹس لیکر خصوصاسحری اور افطاری کے وقت بجلی نہ بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔نور پور نورنگا سے نمائندہ پاکستان کے مطابق واپڈہ والوں نے ماہ صیام کا بھی احترام نہ کیااور لوڈشیڈنگ میں اضافہ کر دیا ۔سحری ،افطاری اور تراوئح کے وقت لائٹ نہیں ہوتی۔گھروں اور مسجدوں میں وضو تک کے لیے پانی نہیں ہوتا۔اہل علاقہ چوہدری محمد علی،ملک بلال،خواجہ جاوید،اللہ ڈتہ کھرل،ملک نوید،مستری اعظم،خواجہ محمد اعجاز،مستری ندیم ،وزیر احمدودیگر نے کہا اگر لائٹ ٹھیک نہ ہوئی تو ہم واپڈہ سب ڈویژن ہیڈ راجکاں کے سامنے احتجاج کریں گے۔لیاقت پور سے تحصیل رپورٹر کے مطابق گر می کی شدت اور طویل لوڈ شیڈنگ سے بے بس ہو کر شہریوں نے ڈی سی ائر کولر ، فین اور سولر سسٹم کی دوکانوں کا رخ کر لیا خریداروں کا رش بڑھنے کی وجہ سے ایسے دوکانداروں نے اپنی ان اشیاء کے ریٹس بھی بڑھا دیے ہیں۔

لوڈشیڈنگ

مزید : ملتان صفحہ آخر