چائنا ٹیلی کا م کے سابق چیئر مین کو رشوت ستانی کے الزام میں 6سال قید کی سزا،728520 امریکی ڈالر جرمانہ

چائنا ٹیلی کا م کے سابق چیئر مین کو رشوت ستانی کے الزام میں 6سال قید کی ...
چائنا ٹیلی کا م کے سابق چیئر مین کو رشوت ستانی کے الزام میں 6سال قید کی سزا،728520 امریکی ڈالر جرمانہ

  

بیجنگ (آئی این پی ) چائنا ٹیلی کام کے سابق چیئرمین چانگ شیاؤ بنگ کو بدھ کو رشوت لینے کے الزام میں چھ سال قید کی سزادی گئی جبکہ 728520 امریکی ڈالر جرمانے کیساتھ ساتھ ان کے ناجائز اثاثوں کی ضبطی کا بھی حکم دیدیا گیا۔

نہال ہاشمی کو بڑھکیں کچھ زیادہ ہی مہنگی پڑ گئیں، چیف جسٹس نے تقریر کا از خود نوٹس لے لیا

ٖغیر ملکی میڈیا کے مطابق چائنا ٹیلی کام کے سابق چیئر مین کو یہ سزا شمالی چین کے صوبہ ہیبی کے باؤ بنگ شہر کی انٹرمیڈیٹ پیپلز کورٹ نے دی ہے ، عدالت نے انہیں 500000یوآن (72850امریکی ڈالر ) جرمانہ بھی کیا اور حکم دیا کہ اس کے تمام ناجائز اثاثے ضبط کئے جائیں ۔ چانگ نے اپنے جرم کا عدالت میں اعتراف کیا اورعدالت نے انہیں 1998ء اور 2014ء کے درمیان مختلف اداروں کیلئے فوائد کے حصول کیلئے چائنایونی کام کے چیئرمین اور ٹیلی کام کے اہلکار کے طورپر اپنے عہدوں سے ناجائز فائدہ اٹھانے کے جرم کامرتکب پایا، اس کے عوض انہوں نے 3.76ملین یوآن سے زیادہ مالیت کے اثاثے اور رقم وصول کی ، یہی نہیں چائنا یونی کام اور چائنا ٹیلی کام چین کے سرفہرست تین ٹیلی کام سروس فراہم کرنیوالوں میں شامل ہیں ۔ عدالت نے اس وجہ سے سزا میں نرمی کا فیصلہ کیا کیونکہ چانگ نے جرم کا اعتراف اور معذرت کا اظہار کیا ہے ،ناجائز اثاثے واپس کر دیئے اور دیگر جرائم کے بارے میں معلومات مہیا کرنے کی پیشکش کی ۔

مزید : بین الاقوامی