اس دن میں TCS کے دفتر سے واپس آ رہی تھی کہ ایک گاڑی میں تین آدمیوں نے میرا راستہ روک لیا،میں نکلنے کی کوشش کرتی رہی لیکن وہ بار بار یہی کام کرتے رہے یہاں تک کہ۔۔۔پھر میرے گھر والوں نے پتہ لگا لیا کہ وہ گاڑی کس کی ہے،پاکستانی لڑکی کا انکشاف جان کر آپ کے بھی ہوش اڑ جائیں گے

اس دن میں TCS کے دفتر سے واپس آ رہی تھی کہ ایک گاڑی میں تین آدمیوں نے میرا ...
اس دن میں TCS کے دفتر سے واپس آ رہی تھی کہ ایک گاڑی میں تین آدمیوں نے میرا راستہ روک لیا،میں نکلنے کی کوشش کرتی رہی لیکن وہ بار بار یہی کام کرتے رہے یہاں تک کہ۔۔۔پھر میرے گھر والوں نے پتہ لگا لیا کہ وہ گاڑی کس کی ہے،پاکستانی لڑکی کا انکشاف جان کر آپ کے بھی ہوش اڑ جائیں گے

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) روایتی ٹیکسی ڈرائیوروں کی جانب سے خواتین مسافروں کو ہراسا ں کرنے پر اکثر یہ بات سننے کو ملتی ہے کہ یہ جاہل اور غیر مہذب لوگ ہوتے ہیں لیکن ایک نوجوان خاتون کے ساتھ اوبر ٹیکسی سروس کے ڈرائیور اور اس کے ساتھیوں نے ایسی بدسلوکی کر ڈالی کہ بدمعاشی کا نیا ریکارڈ قائم کردیا۔ ویب سائٹ parhlo کی رپورٹ کے مطابق متاثرہ خاتون نے اپنے ساتھ پیش آنے والے واقعے کے بارے میں کچھ یوں بتایا ہے:

’تم ابھی میرے گھر آﺅ ورنہ خود کشی کرلوں گی‘ پاکستانی لڑکے کو 19 سالہ محبوبہ کا رات کے 2 بجے فون، گھبرا کر بھاگا بھاگا اس کے گھر پہنچا تو زندگی کا سب سے زوردار جھٹکا لگ گیا، وہ خودکشی نہیں کررہی تھی بلکہ۔۔۔ آگے کیا ہوا؟ جان کر آپ کے آنسو نہ رُکیں گے

میں ڈیفنس کے ٹی سی ایس دفتر سے اپنی گاڑی میں گھر واپس آرہی تھی۔ راستے میں ایک کار نے ایسے خطرناک انداز میں میرا راستہ کاٹا گویا یہ ’فاسٹ اینڈ فیوریئس‘ فلم کا کوئی منظر ہو۔ اس گاڑی میں تین افراد سوار تھے۔ میں سمجھی کہ شائد وہ جلدی میں کسی جانب مڑنا چا ہ رہے تھے لیکن ایسا نہیں تھا۔ کچھ دیر بعد انہوں نے دوبارہ یہی حرکت کی اور میرے راستے میں اپنی گاڑی ترچھی کھڑی کر دی۔ اگلے آدھے گھنٹے کے دوارن وہ بار بار اسی طرح میرا راستہ روکتے رہے۔ میں اس قدر پریشانی اور بوکھلاہٹ کی شکار ہوئی کہ میرا ایکسیڈنٹ ہو گیا۔ میرے منہ سے خون بہہ رہا تھا اور دیگر شدید چوٹیں آئی تھیں ۔ میری یہ حالت دیکھ کر گاڑی میں بیٹھے افراد میں سے ایک نے اپنا سر باہر نکال کر مجھے دیکھا اور پھر تینوں قہقہ لگاتے ہوئے وہاں سے فرار ہو گئے ۔ میرا کیا قصور تھا ؟ بس یہ کہ میں ایک خاتون تھی جو تنہا گاڑی چلا رہی تھی؟

البتہ انہیں بالکل معلوم نہیں تھا کہ میری فیملی انہیں ڈھونڈ نکالنے کیلئے زمین آسمان ایک کر دے گی ، اور ایسا ہی ہوا ۔ سی سی ٹی وی کیمروں ، پولیس اور دیگر اداروں کی مدد سے ان تینوں افراد کا سراغ لگا لیا گیا اور اب وہ سلاخوںکے پیچھے ہیں۔ ان تینوں کا تعلق اوبر ٹیکسی سروس سے ہے۔ میں سوچتی ہوں کہ اگر وہ اپنی گاڑی میں جاتی کسی خاتون کے ساتھ ایسی بدسلوکی کر سکتے ہیں کہ تو ان کے ساتھ سفر کرنے والی خواتین مسافروں کا کیا حال ہوتا ہو گا۔ یہ بات ہم سب کے لئے لمحہ فکریہ ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس