بجٹ میں تنخواہوں،پنشن میں 20فیصد اضافہ،درآمدی ڈیوٹی میں کمی کا امکان

  بجٹ میں تنخواہوں،پنشن میں 20فیصد اضافہ،درآمدی ڈیوٹی میں کمی کا امکان

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) آئندہ مالی سال کیلئے وفاقی بجٹ 2020-21ء میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن میں 20 فیصد اضافے کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے۔ رپورٹ کے مطابق وزارت خزانہ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافے کی مختلف تجاویز زیرغور ہیں۔ابتدا میں 20 فیصد سے 50 فیصد تک اضافے کی مختلف تجاویز دی گئیں لیکن کورو نا کے باعث ملکی معاشی صورتحال کے مدنظر سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں 20 فیصد اضافے کی تجویز پر غور کیا جارہا ہے۔ واضح رہے کہ آئندہ مالی سال کے بجٹ کیلئے تجاویز و سفارشات کی تیاری کا کام تیز کر دیا گیا ہے،آئندہ مالی سال معاشی شرح نمو کا ہدف 3 فیصد رکھنے کی تجویز دی گئی۔ٹیکس ریونیو کا ہدف 5100 ارب روپے رکھنے کا امکان ہے،آئندہ مالی سال کے بجٹ میں کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا جائے گاتاہم ٹیکس وصولی کا نظام بہتر بنایا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق مہنگائی کی شرح کا ہدف 8.4 فیصد، مالی خسارے کا ہدف 5.8 فیصد مقرر کرنے کی تجویز دی گئی،اگلے سال بھی عالمی مالیاتی اداروں سے بھاری مالی امداد ملنے کا تخمینہ ہے،قرضوں کی شرح جی ڈی پی کے85 فیصد تک لانے کا پلان ہے، کرنٹ اکاونٹ خسارے کا ہدف 4 ارب 60 کروڑ ڈالرز رکھنے کی تجویز دی گئی،آئندہ سال دفاعی بجٹ 1402 ارب روپے مختص کرنے کی تجویز دی گئی۔ حکومتی امور کو چلانے کیلئے495 ارب روپے مختص کئے جانے کا امکان ہے۔زراعت، آئی ٹی تعمیراتی اور صنعتی شعبوں کیلئے مراعات فراہم کی جائیں گی۔ تقریبا دو ہزار درآمدی آئٹمز پر ڈیوٹیز میں کمی کی تجویزہے،کسٹم، ایکسائز، ریگولیٹری اور ایڈیشنل کسٹمز ڈیوٹیز میں 2 سے 3 فیصد کمی متوقع ہے۔

تنخواہ اضافہ

مزید :

صفحہ اول -