سعودی عرب اور یو اے ای میں روزگار نہ ہونے کی وجہ سے پاکستانی فاقوں کا شکار:سراج الحق

  سعودی عرب اور یو اے ای میں روزگار نہ ہونے کی وجہ سے پاکستانی فاقوں کا ...

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کو ٹیلیفونک کیا ہے، جس میں انہوں نے شاہ محمود قریشی کو اوورسیز پاکستانیوں کے مسائل سے آگاہ کیا۔ٹیلیفونک رابطے کے دوران سینیٹر سراج الحق کا کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن اور کرفیو کی وجہ سے سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات میں لاکھوں پاکستانی اپنی رہائش گاہوں میں بند ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ سعودی عرب اور یو اے ای میں روز گار نہ ہونے کی وجہ سے لوگ فاقوں کا شکار ہیں، سعودی عرب اور عرب امارات میں رہائش گاہوں میں سینکڑوں افراد کی موجودگی وبا کے پھیلاؤ کا باعث بن رہی ہے۔امیر جماعت اسلامی کا کہنا تھا کہ بیمار افراد کے لیے ایمبولینس کی سہولت نہیں ہے۔ ہسپتالوں کے ڈیڈ ہاوسسز میں میتیوں کے رکھنے کی جگہ نہیں ہے۔ اب تک ایک لاکھ 30 ہزار اوورسیز پاکستانی ٹکٹس کیلئے اپلائی کر چکے ہیں۔سینیٹر سراج الحق کا کہنا تھا کہ پاکستان واپسی پر سفر، ٹیسٹ کی سہولت اور گھروں میں قرنطینہ کی اجازت دی جائے۔ سعودی عرب اور دیگر بڑے ممالک میں سفارتخانوں کی طرف سے ہیلپ لائن کا اعلان کیا جائے۔ 12 ارب روپے میں ایک بڑی رقم اوور سیز پاکستانیوں کے حوالے سے رکھی جائے۔اس موقع پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے سراج الحق کا شکریہ ادا کیا اور انہیں یقین دلایا کہ سفارتخانوں سے رابطہ کر کے انہیں مزید فعال کروں گا، اوورسیز پاکستانیوں کی واپسی پر ان کو عزت کیساتھ مکمل علاج کی سہولت مہیا کی جائیگی۔ صوبائی حکومتوں کو بھی اپنی ذمہ داریاں ادا کرنی چاہیے۔

سراج الحق

مزید :

صفحہ آخر -