محکمہ خوراک کا گرانفروشوں کے گرد گھیرا تنگ‘ مزید 31 گرفتار

محکمہ خوراک کا گرانفروشوں کے گرد گھیرا تنگ‘ مزید 31 گرفتار

  

پشاور(سٹی رپورٹر) محکمہ خوراک نے گرانفروشوں کے گرد گھیرا تنگ کرتے ہوئے مزید 31 افراد کو دھرلیا۔ صوبائی وزیر خوراک الحاج قلندر لودھی‘ سیکرٹری محکمہ خوراک نثار احمد‘ ڈائریکٹر محمد زبیر خان کی ہدایت پر راشننگ کنٹرولر آفتاب عمر کی زیر نگرانی اسسٹنٹ فوڈ کنٹرولر تسبیح اللہ، اور فوڈ انسپکٹرز محسن علی شاہ اور وحید یوسف نے جی ٹی روڈ‘ مدینہ کالونی‘ کالا منڈی‘ ڈھکی نعلبندی‘ جہانگیر پورہ‘ کوہاٹی‘ کباڑی بازار‘ محلہ خداداد اور چوک ناصر خان میں کارروائیاں کرتے ہوئے مختلف فوڈ پوائنٹس میں عام شہری کے بھیس میں خریداری کی اور اشیائے خوردونوش کے معیار کو چیک کیا بعد ازاں محکمہ خوراک کے افسران نے گرانفروشی پر 31 افراد کو گرفتار کرلیا جبکہ ایل آر ایچ ہسپتال کے کینٹین کے منیجر کو بھی گرانفروشی پر دھرلیا گیا۔ گرفتار کئے جانے والے افراد میں قصاب‘ نانبائی‘ دودھ فروش‘ سبزی و پھل فروش‘ جنرل سٹور مالکان اور دیگر شامل ہیں۔ ڈائریکٹر محکمہ خوراک محمد زبیر خان نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ فیلڈ افسران کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ روزانہ کی بنیاد پر گرانفروشوں کے خلاف کارروائیاں کریں اور کسی کے ساتھ رعایت نہ برتی جائے کیونکہ گرانفروش کسی قسم کی رعایت کے مستحق نہیں بلکہ ان کے خلاف سخت سے سخت کارروائی عمل میں لانی چاہئے۔ انہوں نے مزید کہا کہ گرانفروش شہر کے جس کونے میں بھی ہوں وہ قانون کے شکنجے سے نہیں بچیں گے کیونکہ محکمہ خوراک نے ان کو راہ راست پر لانے کا تہیہ کر رکھا ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -