کرونا وائرس اور معاشی مسائل کی وجہ سے آنتوں کی دائمی سوزش کی بیماری میں اضافہ

کرونا وائرس اور معاشی مسائل کی وجہ سے آنتوں کی دائمی سوزش کی بیماری میں اضافہ

  

کراچی (خصوصی رپورٹ) کرونا وائرس کی وبا کے نتیجے میں پریشان کن معاشی صورتحال کی وجہ سے آنتوں کی دائمی سوزش کی بیماری یعنی ”ایریٹیبل باول سنڈروم“کے مریضوں میں اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے۔ اس مرض میں مبتلا لوگوں کا پیٹ اکثر خراب رہتا ہے۔ مریضوں کو ڈائریا، قبض، گیس، پیٹ میں درد اور مروڑ سمیت دیگر شکایات کا سامنا رہتا ہے۔ اسٹریس اور گھبراہٹ جیسے ذہنی امراض کی وجہ سے پیٹ کے

مزید :

صفحہ آخر -