مدارس دینیہ کے منتظمین بھی میدان میں آگئے،حکومت سے بڑا مطالبہ کردیا

مدارس دینیہ کے منتظمین بھی میدان میں آگئے،حکومت سے بڑا مطالبہ کردیا
مدارس دینیہ کے منتظمین بھی میدان میں آگئے،حکومت سے بڑا مطالبہ کردیا

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاق المدارس العربیہ نے حکومت سے کورونا وائرس کی وجہ سے بند ہونے والے مدارس کو حفاظتی تدابیر کی روشنی میں کھولنے کامطالبہ کرتےہوئے کہاہےکہ مدارس والوں کےصبر کا پیمانہ لبریز ہو رہا ہے،دینی30 لاکھ طلبا کی کفالت کر رہے ہیں جن پر حکومت کا ایک روپیہ بھی خرچ نہیں ہوتا،ہماری آواز دین کی سر بلندی کی آواز ہے،جبتک مدارس نہیں کھلتے آواز اٹھاتے رہیں گے۔

جامعہ اشرفیہ  لاہورمیں وفاق المدارس العربیہ پاکستان کےسینئر رہنما مولانا قاضی عبدالرشید نےمولانا  حافظ فضل الرحیم اشرفی کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ مشاورتی اجلاس میں 2 جون سے مدارس میں داخلے اور 12 جون سے کلاسوں کے آغاز کی تجویز دی گئی ہے تاہم حتمی فیصلہ وفاق المدارس العربیہ اور اتحاد تنظیمات مدارس کی قیادت کرے گی ۔مولانا قاضی عبدالرشید نے کہا کہ اجلاس میں پرائیویٹ سکولز سے مل کر حکومت پر دباؤ بڑھانے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے، تبلیغی مراکز کھلوانے اور تبلیغی جماعت کی سرگرمیاں شروع کرانے میں معاونت کی یقین دہانی کرائی گئی ہے، شاپنگ مالز، ٹرانسپورٹ، بازار، سبزی منڈیاں اور نادرا کےدفاتر کھل سکتے ہیں تو مدارس کیوں نہیں کھولےجاسکتے؟صدر مملکت کیساتھ تیار کردہ 20 نکاتی ایس او پیز پر کسی شعبہ نے عمل نہیں کیا، صرف مساجد میں عمل کیا گیا، مذہبی طبقے کو دیوار سے لگایا جارہا ہے، مدارس کو مزید بند رکھنے کے متحمل نہیں ہوسکتے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -