سید علی گیلانی متاثرہ کشمیری خاندانوں سے اظہار یکجہتی کیلئے ، شوپیاں، گول ، کشتواڑ اور سمبل جائیں گے

سید علی گیلانی متاثرہ کشمیری خاندانوں سے اظہار یکجہتی کیلئے ، شوپیاں، گول ، ...

  

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیر میںبزرگ کشمیری حریت رہنما سید علی گیلانی ،جنہیں 235 دن تک گھر میںنظربند رکھنے کے بعد منگل کورہاکیا گیا ہے، گزشتہ چند ماہ کے دوران بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں شہید ہونے والے کشمیری نوجوانوں کے اہلخانہ سے اظہار یکجہتی کےلئے شوپیاں ، گول ، کشتواڑ اور سمبل جائیں گے۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق بزرگ رہنماءکے فورم کے ترجمان نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہا ہے کہ پولیس نے سرینگر میں ان کی رہائش گاہ کا محاصرہ ختم کر دیا ہے ۔

سید علی گیلانی کو بھارتی پولیس نے رواں سال 9مارچ کو نئی دلی سے ان کی مقبوضہ وادی واپسی کے فورابعد گھر میں نظربند کر دیا جب مقبوضہ علاقے میں کشمیری نوجوان محمد افضل گورو کی پھانسی کے خلاف شدید احتجاجی مظاہرے جاری تھے۔ دریں اثناءجموں و کشمیر نیشنل فرنٹ کے چیئرمین نعیم احمد خان سید علی گیلانی کی مزاج پرسی کیلئے حیدر پورہ میں ان کی رہائش گاہ پر گئے ۔ دونوں رہنماو¿ں کچھ دیر تک ایک دوسرے کے ساتھ رہے اور انہوںنے مقبوضہ علاقے کی موجودہ سیاسی صورتحال کے بارے میں تبادلہ خیال کیا ۔

مزید :

عالمی منظر -