کویت میں بلاگر کی دس سال قید کی سزا برقرار رکھنے کی فیصلے کی شدید مذمت

کویت میں بلاگر کی دس سال قید کی سزا برقرار رکھنے کی فیصلے کی شدید مذمت

  

 کویت سٹی (این این آئی)حقوق انسانی کی عالمی تنظیم ہیومن رائٹس واچ اور دیگر سماجی کارکنان نے کویت میں ایک بلاگر کی دس سال قید کی سزا برقرار رکھنے کی فیصلے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ کویتی آزادیِ رائے کا کتنا کم احترام کرتے ہیں ¾عدالت کے فیصلے سے ظاہر ہوگیا ہے ۔میڈیارپورٹ کے مطابق حامد النقی کو گزشتہ سال مائیکرو بلاگنگ کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پیغمبر اسلام، سعودی عرب اور بحرین کے بادشاہ کی توہین کرنے سمیت دیگر الزام میں قصور وار ٹھہرایا گیا تھا۔پیر کو ایک عدالت نے ان کی سزا کو برقرار رکھنے کا فیصلہ سنایا جس کی ہیومن رائٹس واچ نے شدید مذمت کی ہے۔

تنظیم کے مطابق عدالت کے فیصلے سے ظاہر ہوتا ہے کہ کویتی آزادیِ رائے کا کتنا کم احترام کرتے ہیں۔تنظیم نے کویتی حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ حماد النقی کی سزا کالعدم قرار دےکر اس کو فوری طور پر رہا کیا جائے ۔ہیومن رائٹس واچ کے مشرق وسطیٰ کے ڈپٹی ایڈیٹر جو سٹارک کے مطابق حماد النقی کو ہمسایہ بادشاہتوں پر تقنید کرنے کے الزام میں سزا دینا بین الاقوامی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔ سزا کے خلاف اپیل میں حکام کی جانب سے اس خلاف ورزی کی تلافی نا کرنا مایوس کن ہے۔

مزید :

عالمی منظر -