قتل یا خودکشی ‘ ورثا کا خاتون کی میت روڈ پر رکھ کر احتجاجی مظاہرہ

قتل یا خودکشی ‘ ورثا کا خاتون کی میت روڈ پر رکھ کر احتجاجی مظاہرہ

دنیا پور ( نامہ نگار ) قتل یا خو دکشی ، ورثا کا چار بچو ں کی ماں کی میت سپر ہائی وے پر رکھ کر احتجاجی مظاہرہ گاڑیو ں کی لمبی قطاریں لگ گئیں ، سسرالیو ں پر زبر دستی زہر دے کر قتل کرنے کا الزام (بقیہ نمبر41صفحہ12پر )

، خاتون نے کالا پتھر پی کر خود کشی کی ہے پوسٹ مارٹم کے بعد اجزاء معائنے کے لئے لیبارٹری بھجوا دیئے گئے ہیں پولیس کا موقف تفصیل کے مطابق گزشتہ روز نواحی چک نمبر 13۔ ایم کے رہائشی درجنو ں افراد نے کہروڑ چوک پر پہنچ کر خاتون کی نعش رکھ کر اور ٹائر جلا کر سپر ہائی وے کوبلاک کردیا جس سے گاڑیو ں کی لمبی قطاریں لگ گئیں اس موقع پر مقامی پولیس موقع پر پہنچ گئی اور مظاہرین سے مذ اکرات کئے مظاہرین کا الزام تھا کہ چا ر بچو ں کی ماں نجمہ بی بی کو اس کے سسرالیو ں خاوند اور ساس شہناز بی بی نے مبینہ طور پر زبر دستی زہر پلا کو قتل کیا ہے جس کا پولیس مقدمہ درج نہیں کر رہی ادھر پولیس کا موقف ہے کہ متوفیہ نے شوہر سے جھگڑا کرنے کے بعد کالا پتھر پی کر خود کشی ہے جس نے ہسپتال میں ڈاکٹر کو بھی یہی بیان دیا تھا تاہم پوسٹ مارٹم کے بعد اجزاء معائنے کے لئے لیبارٹری بجھوا دیئے گئے ہیں جس کے بعد ہی اصل حقائق سامنے آ ئیں گے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر