دیر بالا مسلسل 6 ماہ سے خشکی کی لپیٹ میں کاشتکار مایوس

دیر بالا مسلسل 6 ماہ سے خشکی کی لپیٹ میں کاشتکار مایوس

دیر بالا(نمائندہ پاکستان) دیر بالا 6ماہ سے مسلسل خشکی کے لپیٹ میں ہیں زمیندار اور کاشتکار برادری مایوسی اور بے چینی میں مبتلا ہیں۔ زمینداروں اور کاشتکاروں کے زرعی پیداوار اتنے کم ہوگئے ہیں کہ وہ کھاد اور تخم کی قیمت بھی پورا نہیں کر رہے ہیں ۔ زمینداروں نے قرضہ پر کھاد لیا تھا خشکی کی وجہ سے پانی کے شدید کمی آئی ہیں ۔ جسکے وجہ سے لوگوں کو پینے کی پانی تک نہیں ملتے ہیں ۔ علاقہ کربلا کا منظر پیش کر رہا ہے ۔ دریائے پنجکوڑہ سے منسلک دریائے عشیرئی ، دریائے دیر ، و دریائے براول اخگرام خوڑ، کیئر درہ خوڑ میں پانی کی شدیدی کمی آئی ہے ۔ اس کے علاوہ علا قے میں مختلف بیماریاں زور پر ہیں ۔ جس میں زکام اور دیگر بیماریاں شامل ہیں ۔ علاقے کی واٹر سپلائی سکیمیں پانی نہ ہونے کی وجہ سے خشک الود ہوا ہے ۔دریائے عشیرئی میں پانی کی کمی کے وجہ سے گندیگار ایریگیشن چینل میں بھی پانی کم ہونے کی وجہ سے پانی کے درست سپلائی نہیں ہورہا ہے ۔ اس سلسلے میں علمائے کرم نے بتایا کہ یہ واقعات ظلم ، بے حیائی ، اور دیگر برائیوں کی وجہ سے آتے ہیں ۔ ہمیں چاہئے کہ علاقے کے لوگ اپنے گھروں میں قرآن مجید کے تلاوت کو عام کرے اور عوامی سماجی حلقوں نے ڈپٹی کمشنر دیر بالا اور ضلع ناظم دیر بالا سے پرُزور مطالبہ کیا ہے ۔ کہ ضلع بھر کے تمام یونین کونسلوں کے سطح نمازیں استسقاء کا پروگرام منعقد کر ے او ربڑے اجتماع نماز استسقاء دیر سٹیڈیم میں کرائے ۔

مزید : علاقائی