بورے والا‘ مسیحاؤں کی بے حسی‘ مریض نے تڑپ تڑپ کر جان دیدی

بورے والا‘ مسیحاؤں کی بے حسی‘ مریض نے تڑپ تڑپ کر جان دیدی

بورے والا (تحصیل رپورٹر) تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے ڈاکٹروں کی بے حسی وارڈ میں داخل مریض نے تڑپ تڑپ کر جان دے دی ورثاء نے انصاف کے حصول کے لئے پٹیشن دائر کر دی تفصیلات کے مطابق چک نمبر 265/EBکے رہائشی حافظ انوار السادات نے ایڈیشنل سیشن جج جسٹس آف(بقیہ نمبر49صفحہ7پر )

پیس کی عدالت میں دائر اپنی پٹیشن میں مؤقف اختیار کیا کہ چند روز قبل رات کے وقت وہ اپنی بیوی مسماۃ آمنہ بی بی کو طبیعت کی خراب حالت میں تڑپتے ہوئے علاج معالجہ کے لئے ہسپتال کی ایمرجنسی پر لے کر آیا ڈیوٹی پر موجود ڈاکٹر نے معمولی چیک اپ کے بعد وارڈ میں داخل کر دیا وارڈ میں موجود فزیشن ڈاکٹر اسد محمود سے مریض کو چیک اپ کرنے کی استدعا کی مگر اس نے لواحقین کی بات پر کوئی توجہ نہ دی جس سے مریض کی مزید بگڑ گئی وارڈ میں ورثاء اپنے مریض کی جان بچانے کے لئے ڈاکٹر کو واسطے دیتے رہے کہ مریض کو چیک کر لیں مگر ڈاکٹر اسد نے کہا کہ وارڈ نرس نے مجھے بتایا ہے کہ مریض کو سانس کا مسئلہ ہے اور ہسپتال میں آکسیجن کا مناسب انتظام نہ ہے آپ مریض کو کہیں اور لے جائیں اس بابت ورثاء نے ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر امجد شکیل سے بھی ٹیلی فون پر رابطہ کیا لیکن انہوں نے کال اٹینڈ نہ کی اس کشمکش میں مریض کی حالت غیر ہو گئی اور ڈاکٹروں کی عدم توجہی ،غفلت اور لاپرواہی کی وجہ سے مریضہ ہسپتال کے وارڈ میں دم توڑ گئی انہوں نے جسٹس آف پیس اور ڈی سی او وہاڑی سے انصاف کی فراہمی کا مطالبہ کیا ہے جبکہ ہسپتال انتظامیہ کے مطابق ایمرجنسی پر موجود ڈاکٹروں نے مریضہ کے چیک اپ کے لئے کوئی تحریری کال نہ بھیجی ہے انکوائر ی کے بعد اصل حقائق کا علم ہو گا .

بے حسی

مزید : ملتان صفحہ آخر