سپریم کورٹ بار الیکشن ،مسلم لیگ ن کے حمایت یافتہ عاصمہ جہانگیر گروپ نے میدان مار لیا ،پیر کلیم خورشید صدر اور صفدر تارڑ سیکرٹری منتخب

سپریم کورٹ بار الیکشن ،مسلم لیگ ن کے حمایت یافتہ عاصمہ جہانگیر گروپ نے میدان ...
سپریم کورٹ بار الیکشن ،مسلم لیگ ن کے حمایت یافتہ عاصمہ جہانگیر گروپ نے میدان مار لیا ،پیر کلیم خورشید صدر اور صفدر تارڑ سیکرٹری منتخب

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے الیکشن میں مسلم لیگ نون کے حمایت یافتہ  عاصمہ جہانگیر گروپ کے پیرکلیم نے تحریک انصاف کے حمایت یافتہ حامد خان گروپ کے حافظ عبد الرحمان انصاری کو شکست دے دی ہے ،عاصمہ جہانگیر گروپ  اور مسلم لیگ ن کے حامی وکلا کا جشن،ڈھول کی تھاپ پر بھنگڑے ۔

نجی ٹی وی کے مطابق سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے سالانہ الیکشن2017۔18  میں مسلم لیگ ن کے حمایت یافتہ معروف قانون دان عاصمہ جہانگیر گروپ کے کامیاب امیدوار پیر کلیم خورشید 1142ووٹ حاصل کرکے بار کے صدر منتخب ہوگئے ہیں جبکہ ناکام ہونے والے حامد خان گروپ کے صدراتی امیدوار حافظ عبدالرحمن انصاری نے 1064ووٹ حاصل کیے۔ سیکرٹری کی سیٹ پر کامیاب امیدوار عاصمہ جہانگیر گروپ کے صفدر حسین تارڑ نے 1372ووٹ حاصل کے جبکہ ان کے مقابل حامد  خان گروپ کےمیاں اسلم نے 763ووٹ حاصل کیئے،مجموعی طور پرملک بھر میں 2992 وکلا نے حق راہے دہی کا استعمال کیا ۔الیکشن میں اسلام آباد راولپنڈی کے 461 وکلا نے سپریم کورٹ میں قائم پولنگ اسٹیشن پر ووٹ ڈالے ۔

سپریم کورٹ بار کے صدر کے عہدہ کے لیے حامد خان گروپ کے حافظ عبدالرحمان انصاری اور عاصمہ جہا نگیر گروپ کے پیر کلیم خورشید سید میں مقابلہ ہوا اور سیکرٹری کی نشست پر میاں محمد اسلم پرویز اور صفدر حسین تارڑ کے درمیان مقابلہ ہوا، فنانس سکریٹری کے لئے ارشد زمان کیانی اور قاضی شہر یار اقبال مدمقابل ہوئے۔چاروں صوبوں کے نائب صدور کی نشست پر 8 امیدواروں کے درمیان مقابلہ ہوا۔ چاروں صوبوں سے ایگزیکٹو ممبران کی نشست پر 27 امیدواروں نے الیکشن لڑیں لڑا ۔سپریم کورٹ بار کے الیکشن کے لئے اسلام آباد، کوئٹہ، کراچی ، کے پی کے اور لاہور سمیت دیگر مقامات پر قائم پولنگ اسٹیشنز میں ووٹنگ صبح اٹھ بجے سے شام پانچ بجے تک جاری رہی۔مجموعی طور پر اب تک غیر سرکاری علان اور الیکشن رزلٹ کے مطابق عاصمہ جہانگیر گروپ نے کلین سوئپ کیا ہے۔سپریم کورٹ اسلام آباد میں قائم پولنگ سٹیشن کے رزلٹ کے مطابق عا صمہ جہانگیر گروپ نے وفاق میں میدان مار تے ہوئے حامد خان گروپ کو کلین سوئیپ کردیا، عاصمہ جہانگیر گروپ کے صدر کے امیدوارپیرکلیم احمد سخت مقابلے کے بعد212ووٹ لے کر کامیاب قرار جبکہ حامد خان گروپ کے صدر کے امیدوار حافظ عبدالرحمان انصاری187ووٹ حاصل کرسکے ، عاصمہ جہانگیر گروپ کی جانب سے جنرل سیکرٹری کے امیدوار صفدر حسین تارڑ نے252ووٹ لے کر واضح برتری حاصل کی غیر حتمی نتائج کے مطابق مجموعی طور پر پیرکلیم خورشید1142حاصل کرکے کامیاب جبکہ مدمقابل عبدالرحمان انصاری 1064ووٹ حاصل کرسکے ،جنرل سیکرٹری کے لئے صفدر حسین تارڑ نے مجموعی طور پر ملک بھر سے 1372ووٹ جبکہ مخالف امیدوارمیاں محمد اسلم 763ووٹ حاصل کرسکے ہیں ۔ گزشتہ روز ملک بھر میں پاکستان سپریم کورٹ بار ایسو سی ایشن کے انتخابات برائے سال 2017-18کے سلسلے میں پولنگ ہوئی وفاقی دارالحکومت میں انتخابات کے غیر حتمی نتائج کے مطابق عاصمہ جہانگیر نے حامد خان گروپ کو کلین سوئیپ کردیا ہے ، عاصمہ جہانگیر گروپ کے صدر کے امیدوار پیر کلیم احمد 212ووٹ کے کر کامیاب جبکہ حامد خان گروپ کے صدر کے امیدوار حافظ عبدالرحمان انصاری 187ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے ،سیکرٹری جنرل کے لئے عاصمہ جہانگیر گروپ کے امیدوار صفدر حسین تارڑ 252ووٹ لے کر واضح برتری حاصل کی جبکہ حامد خان گروپ کے امیدوار میاں محمد اسلم محض 120ووٹ حاصل کرسکے اسی طرح عاصمہ جہانگیر گروپ کی جانب سے نائب صدور میں سندھ سے فرید احمدڈاہیو182 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ، کے پی کے سے ملک مسعود الرحمان 260ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ، پنجاب سے قمرزمان قریشی 233ووٹ لے کر کامیاب جبکہ بلوچستان سے محمد رؤف عطا 222ووٹ لے کر کامیاب ٹھہرے دوسری طرف حامد خان گروپ کی جانب سے نائب صدور کے پی کے تہمینہ محب اللہ 125 ، بلوچستان سے میاں بدر منیر147، پنجاب سے ملک محمد امتیاز محل 147اورسندھ سے خلیق احمد 175ووٹ حاصل کر سکے ۔ عاصمہ جہانگیر گروپ کے ایڈیشنل سیکرٹری ریاست علی گوندل 174ووٹ لے کر کامیاب جبکہ مد مقابل محمد اسلم گھمن 165ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے ، فنانس سیکرٹری کیلئے عاصمہ جہانگیر گروپ کے ارشد زمان کیانی 189ووٹ لے کر پہلے جبکہ حامد خان گروپ کے قاضی شہریار اقبال محض ایک ووٹ سے نشست ہار گئے وہ 188ووٹ حاصل کرسکے ۔ووٹنگ کا عمل صبح ساڑھے آٹھ بجے شروع ہوا جو شام پانچ بجے تک جاری رہا،سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے سالانہ انتخابات کیلئے 2992 وکلاء نے اپنا حق رائے دہی استعمال کیا،اسلام آباد میں461لاہور میں 1287وکلا کے ووٹ رجسٹرڈ ہیں،اسی طرح ملتان میں 204بہاولپور سے 91ووٹرز ہیں،بلوچستان سے 183خیبرپختونخوا سے 287سندھ سے 479 ووٹرز رجسٹرڈ ہیں، وفاقی دارالحکومت میں 461وکلاء میں سے 405وکلاء نے اپنا حق رائے دہی استعمال کیا۔

پیر کلیم خورشید  کے صدر منتخب ہونے کی خبر ملتے ساتھ ہی بارالیکشن میں کامیابی پرعاصمہ جہانگیر گروپ اور مسلم لیگ ن  کے حامی وکلا نے جشن منانا شروع کر دیا ہے جبکہ کئی وکلا ڈھول کی تھاپ پر بھنگڑے بھی ڈال رہے ہیں ۔

مزید : قومی /اہم خبریں