حکومت اپوزیشن کی آزادی مارچ سے بوکھلاہٹ کا شکار ہے، شازیہ طہاش

حکومت اپوزیشن کی آزادی مارچ سے بوکھلاہٹ کا شکار ہے، شازیہ طہاش

  



پشاور(سٹی رپورٹر)پاکستان پیپلزپارٹی کی رہنما وسابقہ ایم پی اے شازیہ طہماش نے کہاہے کہ عمران خان نے 126دھرنے دیا تھا لیکن اب وہ اپوزیشن جماعتوں کی آزادی مارچ پر حکومت بوکھلاہٹ کی شکار ہوگئی ہے اور حکومتی وزراء اوٹ پٹانگ کی باتیں کرنے لگے ہیں۔اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ کہ خیبر پختونخواہ میں ترقی کا پہیہ رک گیا ہے پشاور کھنڈارت کا سا منظر پیش کرنے لگا ہے اور بی آر ٹی تو اہلیان پشاور کیلئے عذاب بن گیا ہے اس حکومت کو دھکا دینے کی بھی ضرورت نہیں ہے وہ خود اپنے انجام کو پہنچ رہی ہے انہوں نے کہا کہ کسی کا بھی احتساب نہیں ہو رہا بلکہ حکومت میں وہ لوگ شامل ہیں جو خود قابل احتساب ہے سیاسی رہنماوں کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔ پاکستان پیپلز پارٹی ایک ایسی قوت ہے جس نے ہمیشہ مثبت کردار سے حکومت کے ایوانوں میں ہلچل مچائی ہے اور اس وقت بھی پوری قوم ایک امتحان سے گزر رہی ہے موجودہ تمام اداروں کو مفلوج کر کے رکھ دیا ہے ڈاکٹرز، کلرک، تاجر،اساتذہ حتیٰ کے کلاس فور ملازمین بھی موجودہ حکومت کے حلاف سراپا احتجاج ہیں کیونکہ موجودہ حکومت نے مہنگائی،بے روزگاری اور بڑھتی ہوئی لاقانونیت سے پوری قوم کا جینا حرام کرد یا ہے اور معیشت کو تباہ و برباد کر دیا ہے سود کی شرح بڑھ گئی ہے حکومت نے ائی ایم ایف کے سامنے گھٹنے ٹیک کر پاکستان کو مزید اقتصادی طور پر مفلوج کر دیا ہے انہوں نے مزید کہا کہ جمہوریت پابند سلاسل ہے ہم جمہوریت کو آزاد کرنے کے لیے نکلے ہیں۔ اور جمہوریت کو آزاد کر کے دم لیں گے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر