”تھاپ“کے زیرِ اہتمام کانفرنس کا اہتمام

”تھاپ“کے زیرِ اہتمام کانفرنس کا اہتمام

  



لاہور(فلم رپورٹر)”تھاپ“کے زیرِ اہتمام اس سال بھی ایک کانفرنس کا اہتمام کیا گیا ہے جس کا مقصد آج کے معاشرے اور ہماری شہری زندگی کی عکاسی کرنا ہے۔ کانفرنس کے انعقاد کا مقصد معاشرے میں رواداری اور برداشت کو فروغ دینا ہے۔ معاشرے کو اس موضوع کی اہمیت سے روشناس کروانے کے لئے کانفرنس کا عنوان،”شہر اور شہری”تجویز کیا گیا ہے۔ موجودہ کانفرنس کا انعقاد تھاپ اور انسٹی ٹیوٹ فار آرٹ اینڈ کلچر کے مشترکہ تعاون سے کیا گیا ہے۔انسٹی ٹیوٹ فار آرٹ اینڈ کلچر ایک نوتعمیرشدہ ادارہ ہے جس کے قیام کا مقصد انگریزی، اردو اور پنجابی کی ترویج کے ساتھ ساتھ آزاد خیالی اور معاشرتی رواداری کا فروغ ہے۔ انسٹی ٹیوٹ فار آرٹ اینڈ کلچر لاہور میں واقع ہے جو اپنے پہلے تعلیمی سال کا باقاعدہ آغاز ستمبر 2018 سے کرچکا ہے۔ کانفرنس کا آغاز یکم نومبر سے ہوگا جو 3 نومبر تک جاری رہے گی۔ اس تین روزہ کانفرنس کا اہتمام 43-Gگلبرک میں کیاگیا ہے۔ ہر سال مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے مندوبین کانفرنس میں بھرپور شرکت کرتے ہیں، رواں سال کانفرنس میں شرکت کے لیے پاکستان اور بیرونی ممالک سے مختلف مندوبین کو دعوت دی گئی ہے۔ مقالہ جات کو پیش کرنے کا سلسلہ تین روز تک جاری رہے گا۔کانفرنس کے پہلے روز کی صدارت کے لیے پروفیسر ڈاکٹر انیس صدیقی اور سینئر آرکیٹکٹ جناب احمد پرویز مرزا کو دعوت دی گئی ہے. 2 نومبر کے روز پروفیسر ڈاکٹر سمرا محسن، آرکیٹکٹ وقار عزیز، پروفیسر عائشہ امداد اور پروفیسر ڈاکٹر نیلم ناز صدارت کا منصب سنبھالیں گے۔

جبکہ 3 نومبر کو صدارت کے لیے پروفیسر مشتاق صوفی اور پروفیسر گلزار حیدر کو مدعو کیا گیا ہے۔ تھاپ کانفرنس کے زیرِ اہتمام معاشرے کے حساس اور تعلیم یافتہ طبقے کو اظہارِ خیال کا موقع فراہم کیا جاتا ہے تا کہ وہ اپنی تحقیق اور خیالات کو معاشرے کے سامنے پیش کر سکیں۔ اس سے نئے سوالات جنم لیتے ہیں اور معلومات کا تبادلہ ہوتا ہے جو معاشرے میں باہمی روابط کے لئے ناگزیر ہے۔

مزید : کلچر