بچکانہ سیاست نے مہاجروں کو تنہا کردیا ہے: ڈاکٹر سلیم حیدر

بچکانہ سیاست نے مہاجروں کو تنہا کردیا ہے: ڈاکٹر سلیم حیدر

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدرنے کہا ہے کہ بدقسمتی سے غلط حکمت عملی اور بچکانہ سیاست نے مہاجروں کو تنہائی کی طرف دھکیل دیا ہے۔ مہاجر حکمرانوں کی ہاتھ کی چھڑی اور جیب کی گھڑی بنادیئے گئے ہیں۔ سندھ کے مہاجر ہمیشہ جمہوری سیاسی تحریکوں میں ہراول دستے کا کردار ادا کیا کرتے تھے لیکن اب چند پیداگیروں نے اپنے ذاتی مفادات کیلئے پوری قوم کو سیاسی عمل سے باہر کروادیا ہے، کراچی اور حیدرآباد کے مہاجر سیاست، تجارت، معیشت، صحافت، ادب اور فنون لطیفہ میں ہراول دستے کا کردار ہوتے تھے۔ آج یہ سارے شعبے مہاجرنام سے خالی ہوگئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ سندھ میں جس طرح صوبائی اور وفاقی حکومتیں مہاجروں کا استحصال کررہی ہیں اس کے بعد اب مہاجروں کو ہوش کے ناخن لینا چاہئے اور ایک ہی سوراخ سے بار بار ڈسے جانے کے عمل سے باہر آنا چاہئے کیونکہ آج سندھ کے ڈھائی کروڑ مہاجر احساس محرومی کی انتہا کو پہنچ چکے ہیں۔ نوجوان اپنے مستقبل سے مایوس ہیں، تاجر اور صنعتکار کاروباری ابتری کا شکا رہیں۔ کراچی اور حیدرآباد کی شناخت کچرا بن چکی ہے۔ حکومتیں ملک کا 70فیصد ٹیکس دینے والے کراچی کو 7فیصد کی خیرات بھی دینے کو تیا رنہیں ہیں۔ تعلیم سے لے کر ملازمتوں تک مہاجر نوجوان اپنے ہی شہر میں اجنبی بنادیئے گئے ہیں اور اندرون سندھ کے پسماندہ علاقوں سے لاکر اُن متعصب اور راشی افسران کو کراچی میں لگایا گیا ہے جو تعصب کی بنیاد پر مہاجر عوام کے جائز کام بھی بغیر کسی رشوت کے نہیں کررہے۔ انہوں نے کہاکہ اگر یہی صورتحال رہی تو پھر مہاجر سندھ کے شہری علاقوں میں ریڈ انڈین بن جائیں گے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -