جیلوں میں شدید بیمار قیدیوں کو علاج کی معیاری سہولتیں دینے کا فیصلہ، فہرستیں طلب

جیلوں میں شدید بیمار قیدیوں کو علاج کی معیاری سہولتیں دینے کا فیصلہ، ...

  

لاہور(جنرل رپورٹر)وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے جیلوں میں قید شدید بیمار قیدیوں کو بھی علاج معالجے کی معیاری سہولتیں دینے کا فیصلہ کرتے ہوئے ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ سے شدید بیمار قیدیوں کی فہرست طلب کر لی۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ شدید بیمار قیدیوں کی فہرست جلد تیار کرکے پیش کی جائے۔ایوان وزیراعلیٰ میں منعقدہ اجلاس میں آزادی مارچ کے شرکاء کی سکیورٹی اور امن و امان قائم رکھنے کیلئے کئے جانے والے اقدامات کا جائزہ لیا گیا۔اس موقع پر وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ یہ دو نہیں، ایک پاکستان ہے، جیلوں میں بند شدید بیمار قیدیوں کو بھی علاج معالجے کی معیاری سہولتیں ملنا ان کا حق ہے اور پنجاب حکومت یہ حق شدید بیمار قیدیوں کو دے گی۔ اجلاس میں آزادی مارچ کے حوالے سے مختلف شہروں میں اٹھائے گئے سکیوررٹی اقدامات پر بھی غور کیا گیا۔ وزیراعلیٰ نے پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کو چوکس رہنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ شہریوں کی جان و مال کے تحفظ کیلئے ہرممکن اقدام اٹھایا جائے، کسی کو قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت ہر گز نہیں دی جائے گی اورکاروبار زندگی میں کسی کو خلل نہیں ڈالنے دیں گے۔انہوں نے کہا کہ قانون ہاتھ میں لینے والوں کے خلاف قانون حرکت میں آئے گا لہٰذا صوبے میں قانون کی عملداری کو ہر قیمت پر یقینی بنایا جائے گا۔۔ انسپکٹر جنرل پولیس نے مارچ کے شرکاء کی سکیورٹی اور صوبے میں امن و امان کی صورتحال کے بارے میں بریفنگ دی۔بعدازاں انجینئرز کی تربیت کیلئے محکمہ ہائیر ایجوکیشن پنجاب اور لیمپرو میلن لمیٹڈ پاکستان کے درمیان معاہدے پر دستخط کیے گئے۔سیکرٹری محکمہ ہائیر ایجوکیشن پنجاب ساجد ظفر ڈال اور صدر لیمپرو میلن پاکستان صباحت رفیق نے مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کئے۔معاہدے کے تحت ہر سال 5 ہزار انجینئرز کو لیمپرو میلن سرٹیفکیشن کا کورس کرایا جائے گا۔ محکمہ ہائیر ایجوکیشن پنجاب کی یونیورسٹیوں اور تعلیمی اداروں کے انجینئرز لیمپرو میلن سرٹیفکیشن کا کورس کے اہل ہوں گے۔ہر سال 5 ہزار انجینئرنگ کے طالب علم لیمپرو میلن سرٹیفکیشن کا امتحان دیں گے اوریہ معاہدہ اگلے 10 برس کیلئے ہوگا۔لیمپرو میلن سرٹیفکیشن کے امتحان میں کامیاب انجینئرز کو روزگار کے بہترین مواقع میسر آئیں گے۔لیمپرو میلن لمیٹڈ 50 طالب علموں کو فری تربیت بھی فراہم کرے گی۔وزیراعلیٰ نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ دنیا بھر میں سیمی کنڈکٹر انڈسٹری میں انجینئرز کی بڑھتی ہوئی طلب کی ضروریات پورا کرنے کیلئے یہ معاہدہ بہت اہمیت رکھتا ہے اور اس معاہدے سے پاکستان خصوصاً پنجاب کے انجینئرز کو سیمی کنڈکٹر انڈسٹری میں بہترین روزگار کے مواقع ملیں گے اوراگلے 5 برس کے دوران پاکستان کے 70 ہزار انجینئرز انٹرنیشنل سیمی کنڈکٹر انڈسٹری میں ملازمتیں حاصل کرسکیں گے۔

سردار عثمان بزدار

مزید :

صفحہ اول -