سیلز ٹیکس اور 50ہزار کی فروخت پر شناختی کارڈ کی شرط سے تاجروں میں بے چینی پھیلی: سٹیٹ بینک

  سیلز ٹیکس اور 50ہزار کی فروخت پر شناختی کارڈ کی شرط سے تاجروں میں بے چینی ...

  

کراچی (آئی این پی)سٹیٹ بینک آف پاکستان نے 50ہزار کی زائد خریداری پر شناختی کارڈ کی شرط پر کہا ہے کہ قلیل مدت میں ایسے اقدامات سے معیشت پر منفی اثرات ہو سکتے ہیں جبکہ حکومت کو تاجروں کو ان سے متعلق سمجھانے کی ضرورت ہے۔تفصیلات کے مطابق پاکستانی معیشت کو دستاویزی کرنے کیلئے ایف بی آر کے اقدامات پر سٹیٹ بینک پاکستان نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ایف بی آر ٹیکس کے دائرے کار بڑھانے کیلئے اقدامات کررہا ہے جبکہ سیلز ٹیکس اور پچاس ہزار کی فروخت پر شناختی کارڈ کی شرط سے بے چینی پھیلی ہے۔سٹیٹ بینک نے اپنے تبصرے میں کہا کہ تاجروں کو اقدامات سے متعلق سمجھانے کی ضرورت ہے جبکہ معیشت کو دستاویزی کرنے جیسی اصلاحات غیر مقبول ہوتی ہیں، شناختی کارڈ کی شرط غیر اندراج شدہ خریدار کیلئے نہیں ہیں اور نہ یہ شرط گھریلو صارفین کیلئے ہیں، سٹیٹ بینک کے تبصرے میں کہا گیا ہے کہ کاروباری غرض سے پچاس ہزار سے زائد خریداری پر شناختی کارڈ نمبر نوٹ کرنا ہے جبکہ قلیل مدت میں ایسے اقدامات کے معیشت پر منفی اثرات ہو سکتے ہیں، ایف بی آر کو پالیسی سے متعلق تاجروں سے بات چیت جاری رکھنی چاہئے۔

سٹیٹ بینک

مزید :

صفحہ اول -