دنیا کی سب سے بزرگ خاتون انتقال کرگئی

دنیا کی سب سے بزرگ خاتون انتقال کرگئی
دنیا کی سب سے بزرگ خاتون انتقال کرگئی

  

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) دنیا کی طویل العمر ترین روسی خاتون گزشتہ روز دنیا سے رخصت ہو گئی۔ دی مرر کے مطابق تنزیلیا بیزمبے ایوا (Tanzilya Bisembeyeva)نامی اس خاتون نے 123سال عمر پائی۔ اس نے تین صدیاں دیکھیں اور راسپوتین سے پیوٹن تک کے ادواراپنی آنکھوں سے دیکھے۔ حال ہی میں تنزیلیا سے اس کی اتنی طویل عمر کا راز پوچھا گیا تو اس نے بتایا تھا کہ وہ تمام عمر کیفیر (Kefir)(پھٹا ہوا دودھ)شوق سے پیتی ہے اور یہی اس کی طویل عمر کا راز ہے۔ اس کے علاوہ اس نے بتایا کہ ”میں نے کبھی ہاتھ نہیں چھوڑے، ہمیشہ کام کرتی رہی اور صحت مند لائف سٹائل کے ساتھ زندگی گزارتی رہی۔ یہ بھی میری لمبی عمر کے راز ہیں۔“

رپورٹ کے مطابق تنزیلیا 1896ءمیں روس کے آخری زار نکولس دوئم کی تاج پوشی کے دو ماہ بعد پیدا ہوئی تھی۔ اس نے سٹالین کا آمرانہ دور بھی دیکھا اور روسی انقلاب بھی۔ اس نے اپنے حالیہ انٹرویو میں بتایا تھا کہ اس نے تمام عمر سخت مشقت کی اور ہر طرح کے حالات میں امید کا دامن ہاتھ سے نہیں چھوڑا۔53سال کی عمر میں اس کے ہاں پہلا بیٹا پیدا ہوا۔ جو اس کے دوسرے شوہر سے تھا۔ اس کے بعد اس نے دو اور بیٹوں کو جنم دیا۔ آگے اس کے 10پوتے پوتیاں اور 25پڑپوتے پڑپوتیاں ہوئے اور اب آگے ان کے بعد دو بچے ہیں۔ وہ روس کے استراخن (Astrakhan)نامی علاقے میں رہائش پذیر رہی اور وہیں اس کی موت واقع ہوئی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -