سانحہ تیز گام ، 4 جاں بحق افراد کی شناخت، کیا کام کرتے تھے اور ان کے کتنے بچے ہیں؟ ایسی تفصیلات سامنے آگئیں کہ آپ کی آنکھیں بھی نم ہوجائیں گی

سانحہ تیز گام ، 4 جاں بحق افراد کی شناخت، کیا کام کرتے تھے اور ان کے کتنے بچے ...
سانحہ تیز گام ، 4 جاں بحق افراد کی شناخت، کیا کام کرتے تھے اور ان کے کتنے بچے ہیں؟ ایسی تفصیلات سامنے آگئیں کہ آپ کی آنکھیں بھی نم ہوجائیں گی

  



عمرکوٹ(سید ریحان شبیر ) ضلع عمرکوٹ کے شہر کنری اور گاؤں عبدالحکیم آریسر سے تعلق رکھنے والے  افراد بھی تیزگام ایکسپریس حادثے کے متاثرین میں شامل ہیں جن میں سے چار افراد کے جاں بحق اور سات  کے زخمی ہونے کی تصدیق ہوگئی ہے جبکہ پانچ افراد تاحال لاپتہ ہیں ۔ لاپتا افراد کے ورثاءسخت پریشانی میں مبتلا ہیں، جاں بحق ہونے والے افراد کے گھروں میں صف ماتم بچھ گئی۔

تفصیلات کے مطابق  لیاقت پورتیزگام ایکسپریس آتشزگی حادثہ کنُری شہر سے تعلق رکھنے والے دس افراد بھی تبلغی قافلے میں شامل تھے جن میں سے کنری کے رہائشی تین افراد بلال اسلم،خوشی محمد اور آفاق احمد  اور تحصیل پتھور کے گاوں عبدالحکیم آریسر کے رہائشی عبدالجبار آریسر کے جاں بحق ہونے کی تصدیق ہوگئی ہے ۔ سات افراد اقبال بھٹی،یوسف،سروربھٹی،علی بھٹی،محمد آریسر، اور رضوان شدید زخمی ہوگئے ہیں جن کے اہلخانہ کا ان سے رابطہ ہو گیا ہے، جبکہ پانچ افراد فقیرمحمد، یعقوب بھٹی عبدالواحد  آریسرعبدالرحمان آریسر  تاحال لاپتہ ہیں۔

جاں بحق ہونیوالا نوجوان آفاق احمد کے تین کمسن بچے ہیں اور وہ موٹر سائیکلوں کی خریدوفروخت کا کام کرتا تھا جبکہ بلال اسلم اور خوشی محمد مزدور پیشہ افراد تھے جبکہ عبدالجبار کاشتکاری کیا کرتے تھے۔ جاں بحق ہونیوالے افراد کے گھروں میں صف ماتم بچھ چکی ہے جبکہ زخمیوں اور لاپتہ افراد کے لواحقین سخت پریشانی میں مبتلا ہیں ۔

جاں بحق ہونے والے افرادکے لواحقین کاکہنا ہے کہ مرحومین اللہ کی خوشنودی کیلئے گئے تھے جو اللہ کی راہ میں شہید ہوگئے ہیں،آخری اطلاع تک جاں بحق ہونے والے چاروں افراد کی میتیں آبائی علاقوں کیلئے روانہ کردی گئی ہیں جبکہ زخمی افراد لیاقت پور اور بھاولپورکے ہسپتالوں میں زیرعلاج ہیں ۔

مزید : قومی /علاقائی /سندھ /عمرکوٹ